آپ آف لائن ہیں
جمعرات9؍ رمضان المبارک 1442ھ22؍اپریل 2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

انگریزی کو’کُول‘، اردو کو جہالت بنانے والے ہم ہی ہیں: یاسر حسین

پاکستان کے کامیڈین اداکار یاسر حسین نے ریستوارن مالکان کا مینجر کی انگریزی کا تمسخر اُڑانے پر شوبز ستاروں کے مذمت پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ انگریزی کو ’کُول‘اور  اردو کو جہالت بنانے والے ہم ہی ہیں۔

یاسر حسین نے اپنی انسٹاگرام اسٹوری میں طویل تحریر کے ذریعے معاملے کو نیا رُخ دیا۔

انہوں نے کہا کہ ’اسلام آباد میں ہوٹل مالکان نے اپنے مینجر کی انگریزی کا مذاق اڑایا اور مزے کی بات یہ کہ ساری دنیا میں موجود لوگوں نے مجھ سمیت انگریزی میں ہی آواز اُٹھائی۔‘

یاسر حسین  نے کہا کہ ’کسی نے یہ سوچا کہ اس مینجر کو انگریزی بولنے کی ضرورت کیوں پڑی، یہ کامپلیکس معاشرے میں آیا کہاں سے؟‘

کامیڈین اداکار نے لکھا کہ ’شرم کا مقام ہے کہ ہم نے ہی انگلش کو کُول یعنی اچھا اور انگریزی کو جہالت بنا دیا ہے۔‘

خیال رہے کہ سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو وائرل ہوئی جس میں خواتین جو خود کو ایک ریسٹورنٹ کا مالک بتاتی ہیں وہ اس ریسٹورنٹ کے منیجر کو بلا کر اس کے ساتھ انگریزی میں بات چیت کرتی ہیں جبکہ منیجر کی انگریزی اتنی اچھی نہیں ہوتی جس پر وہ اس کا مذاق بناتی ہیں اور تمسخر اڑاتے ہوئے ہنستی بھی ہیں۔

بعدازں ریستوران کی جانب سے ایک بیان جاری کیا گیا ہے جس میں انہوں نے کہا ہے کہ انہیں اپنی ٹیم کے ایک رکن کے ساتھ ’ہلکی پھلکی گفتگو‘ کو لوگوں کی جانب سے غلط انداز میں لیے جانے پر افسوس اور حیرانی ہے۔

انٹرٹینمنٹ سے مزید