آپ آف لائن ہیں
جمعرات12؍رجب المرجب 1442ھ25؍فروری 2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

20 الیکشن افسروں کے فون ایک ساتھ بند ہونا حیران کن ہے، خرم دستگیر

اسلام آباد (نیوز ایجنسیاں) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما خرم دستگیر نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن کے 20 افسران کے فون بند ہو جانا حیران کن عمل ہے، ڈسکہ کی گلیوں اور سڑکوں پر فائرنگ کی گئی، حکومت نے این اے 75 کے عوام کا حق چھینا ہے، حکومت پنجاب ناکام ہے، 96 گھنٹوں سے یہ معاملہ چل رہا ہے، خواجہ سعد رفیق نے کہاہے کہ پی ٹی آئی نے تارے توڑ کر لانے کی بات کی تھی اور پرفارمنس زیرو ہے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ سعد رفیق نے کہاکہ الیکشن کمیشن میں این اے 75 کے معاملے پر حاضر ہوئے ہیں، ڈسکہ میں کھلم کھلا پاکستان کے آئین کو چیلنج کیا گیا ۔ انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی کے اسکواڈز موٹر بائیکوں پر فائرنگ کرتے رہے،پی ٹی آئی نے پری پلان دھاندلی کی ہے۔ انہوں نے کہاکہ این اے 75 میں دوبارہ الیکشن کروایا جائے ہم نے الیکشن کمیشن میں استدعا کی ہے،کارکن کسی جماعت کا بھی ہو کسی کی جان سے کیوں کھیلا گیا۔ ریاست کے ملازمین کو معلوم ہونا چاہیے کہ وہ قانون کے مطابق کام کرنا ہے۔ لنگر خانے کھول کر عوام کی خدمت ہوتی ہے

اور نہ ہی ملک ترقی کرتا ہے۔ خرم دستگیر خان نے کہا کہ اس حکومت نے عوام سے جینے کا حق چھین لیا ہے،عوام کو جاننے کا حق حاصل ہے کہ ان کا ووٹ کہاں گیا ؟۔ انہوں نے کہاکہ ہم نے قانونی جنگ لڑنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس جنگ کو فیصلہ کن بنائیں گے۔

اہم خبریں سے مزید