آپ آف لائن ہیں
اتوار27؍شعبان المعظم 1442ھ 11؍اپریل2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

سگریٹ نوشی چھوڑنے کے بعد ذہن پر کیا اثرات مرتب ہوتے ہیں؟

نئی تحقیق کے مطابق سگریٹ نوشی چھوڑنے کے چند ہفتوں میں ہی ذہنی صحت پر مثبت اثرات نمایاں ہونا شروع ہوجاتے ہیں۔

امریکا میں شائع ہونے والی حالیہ جائزہ رپورٹ کےمطابق سگریٹ نوشی سے ہرسال دنیا بھر میں 8 ملین سے زائد اور امریکا میں 4 لاکھ 80 ہزار سے زائد افراد جان سے جاتے ہیں۔

امریکی ادارے سی ڈی سی کے مطابق امریکا میں تقریباََ 40 ملین افراد سگریٹ نوشی کرتے ہیں، جن کا خیال ہےکہ یہ ذہنی دباؤ، اینزائٹی اور ڈپریشن میں کمی کرتی ہے لیکن حالیہ تحقیق کے مطابق سگریٹ نوشی ان دماغی امراض میں کمی کے بجائے اضافے کا سبب بنتی ہے۔

تحقیق کے مطابق معلوم ہوا ہے کہ سگریٹ نوشی چھوڑنے کے بعد اینزائٹی، ڈپریشن اور ذہنی تناؤ میں واضح کمی ہوتی ہے۔

نئی تحقیق میں یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ سگریٹ نوشی کرنے والے افراد میں زیادہ تعداد ذہنی امراض میں مبتلا افراد کی ہوتی ہے۔

صحت سے مزید