• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

پیپلز پارٹی نے انتخابی اصلاحات سے متعلق صدارتی آرڈیننس مسترد کر دیا


پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) نے انتخابی اصلاحات سے متعلق صدارتی آرڈیننس مسترد کردیا ہے۔

پیپلز پارٹی کی رہنما سینیٹر شیری رحمان نے کہا ہے کہ آرڈیننس عدالت میں چیلنج ہوسکتا ہے۔

جیو نیوز کے پروگرام  جیو پاکستان میں گفتگو کرتے ہوئے شیری رحمان نے کہا کہ حکومت کی الٹی گنتی شروع ہوچکی ہے، حکومت آرڈیننس کے ذریعے الیکشن اصلاحات نہیں لا سکتی۔

 شیری رحمان نے کہا کہ ان لوگوں نے قانون سازی پر تالے لگائے ہوئے ہیں، ہر کام آرڈیننس سے کر رہے ہیں، ان کے لوگ فارورڈ بلاک بنا رہے ہیں، ان کے نمبرز ہلے ہوئے ہیں، اس لیے آرڈیننس کے ذریعے کام کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم اگر اصلاحات میں سنجیدہ ہیں تو سب کی میٹنگ بلائیں اور اپنے ساتھ بٹھائیں۔

پی پی رہنما نے کہا کہ پارلیمان اور الیکشن کمیشن کی مشاورت کے بغیر اصلاحات کو الیکشن پروسیس کا حصہ بنایا جارہا ہے، آرڈیننس کی 120 دن کی وقعت ہوتی ہے، اس کے بعد یہ لاگو نہیں ہوتا۔

شیری رحمان نے کہا کہ حکومت کی الٹی گنتی شروع ہوچکی ہے،  سینیٹ الیکشن میں حکومت کو شکست ہوچکی ہے، حکومت میں فارورڈ بلاک بن چکے ہیں،  یہ ہرجگہ شکست اور فارورڈ بلاک کا سامنا کر رہے ہیں، حکومت کی جڑیں ہلی ہوئی ہیں۔

قومی خبریں سے مزید