• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

غیرمعیاری خوراک اور ناشتہ نہ کرنے سے خواتین ذہنی دباؤ میں مبتلا ہوتی ہیں، تحقیق

ایک نئی تحقیق کے مطابق مردوں کے مقابلے میں خواتین میں ذہنی دباؤ بڑھنے کی وجہ غیر صحت بخش خوراک کا استعمال ہے، اس قسم کی غیر صحت بخش خوراک یا فاسٹ فورڈ، صبح کا ناشتہ نہ کرنا، کیفین اور ہائی گلاسیمک خوراک خواتین میں مردوں سے زیادہ نقصان کا باعث بنتا ہے اور وہ ذہنی دباؤ میں مبتلا ہوجاتی ہیں۔ 

یہ تحقیق بنگمنٹن یونیورسٹی، جو کہ نیویارک اسٹیٹ یونیورسٹی سے منسلک ہے اس کے محقیقن نے کی۔ جو جرنل آف پرسنلائزڈ میڈیسن میں شائع ہوئی ہے اس کے مطابق بالغ افراد میں ورزش اور بہتر ذہنی صحت کا تعلق خوراک میں تبدیلی سے ہے۔

بنگمنٹن یونیورسٹی کی تحقیقی ٹیم میں شامل اسسٹنٹ پروفیسر آف ہیلتھ اینڈ ویل بینگ اسٹڈیز لینا بیگڈاچے کی اس سے قبل جو تحقیق شائع ہوئی وہ ڈائٹ اور موڈ پر مبنی تھی جس میں تجویز دی گئی تھی کہ اعلیٰ معیار کی خوراک ذہنی صحت کو بہتر کرتی ہے۔

انکا مزید کہنا تھا کہ وہ بطور ٹیسٹ تیس سال یا اس سے زیادہ عمر کے مردوں اور خواتین میں خوراک میں مرضی کی تبدیلی کرکے یہ دیکھنا چاہتی تھیں  کہ کیا اس سے موڈ بہتر ہوتا ہے، تجربے سے یہ بات سامنے آئی کہ خواتین میں غیر معیاری اور ناقص خوراک  ذہنی دباؤ کا سبب بنتا ہے۔

صحت سے مزید