• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

پاکستان دو طرفہ سرمایہ کاری معاہدے کے سانچے پر نظرثانی کررہا ہے، رفعت پرویز، ویانا میں ویبینار

ویانا (اکرم باجوہ) ویانا میں پاکستان کے مستقل مشن اقوام متحدہ کے کمیشن برائے بین الاقوامی تجارتی قانون (UNCITRAL) وزارت تجارت اور بورڈ آف انویسٹمنٹ اسلام آباد نے مشترکہ طور پر سرمایہ کاروں کے درمیان تنازعات کے تصفیے (آئی ایس ڈی ایس) کے حوالے سے ایک ویبنار کا اہتمام کیا۔ اس میں UNCITRAL وزرات تجارت اور قانون و انصاف اور پاکستان کے سرمایہ کاری بورڈ کے سینئر عہدیداروں کے علاوہ کے پی کے، سندھ اور بلوچستان کے صوبائی سرمایہ کاری کے محکموں کے نمائندوں نے بھی شرکت کی۔سفیر۔پاکستان ویانا آفتاب احمد کھوکھر نے اپنے استقبالیہ کلمات میں UNCITRAL کی سکریٹری محترمہ انا جوبن بریٹ کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے UNCITRAL کی مہارت کو دو طرفہ سرمایہ کاری کے معاہدوں اور اس علاقے میں حالیہ تازہ ترین پیشرفتوں اور قانونی اصلاحات سے نمٹنے کے لئے UNCITRAL کی مہارت کو شیئر کرنے کے لئے منظم کیا۔انہوں نے پاکستانی ماہرین کی صلاحیت کو بڑھانے ،باہمی سرمایہ کاری کے معاہدوں میں بہتری لانے کے لئے UNCITRAL کی حمایت کی درخواست کی تاکہ قانونی ڈھانچے میں بہتری لائی جاسکے اور سرمایہ کاری کے تنازعات کی صورت میں مستقبل میں ہونے والے مالی نقصانات سے بچا جاسکے۔ حکومت کی توجہ تبدیلی کے پیش نظر پاکستان کی ترقی کے لئے غیر ملکی سرمایہ کاری کی اہمیت کو اجاگر کیا۔ UNCITRAL کی سکریٹری محترمہ انا جوبن بریٹ نے بہترین طرز عمل کو بانٹنے اور اپنی دوطرفہ سرمایہ کاری کے معاہدے کو بہتر بنانے کے لئے پاکستان کی مدد کرنے پر آمادگی کا اظہار کیا۔ محترمہ ماریانا برونو پولیرو ، قانونی افسر نے UNCITRAL شفافیت کے معیارات کے متعدد عناصر پر روشنی ڈالی۔ ورکنگ گروپ III کی سکریٹری محترمہ کورین مونٹینیری نے آئی ایس ڈی ایس میکانزم کی بہتری کے لئے ورکنگ گروپ کے موجودہ کام کے بارے میں آگاہ کیا تاکہ آئی ایس ڈی ایس ٹریبونلز کے ذریعہ مستقل مزاجی ، ہم آہنگی ، پیش گوئی اور صوابدیدی فیصلوں کی درستگی سے متعلق خدشات کو دور کیا جاسکے۔ ڈیوڈ پروبسٹ ایسوسی ایٹ ماہر نے آئی ایس ڈی ایس کے لئے اپیلٹ طریقہ کار کے بارے میں ورکنگ گروپ III کے جاری کام پر روشنی ڈالی جبکہ محترمہ جوڈتھ نائپر لیگل آفیسر نے تنازعات کے حل کے متبادل طریقہ کار میں اصلاحات کے بارے میں بات کی۔ بورڈ آف انویسٹمنٹ کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر جنرل رفعت پرویز نے سرمایہ کاری کے نظام اور سرمایہ کاروں کو پاکستان کے مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کے لئے مراعات کے بارے میں آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اپنے دوطرفہ سرمایہ کاری معاہدے کے سانچے پر نظرثانی کر رہا ہے اور سرمایہ کاروں اور ریاست دونوں کے مفادات کے تحفظ کے ل its اس کی مختلف خصوصیات کو اجاگر کرتا ہے۔ پاکستان بین الاقوامی تجارت میں سہولت کے legal قانونی فریم ورک کو بہتر بنانے کے لئے UNCITRAL کے اہم کام کی تعریف کرتا ہے۔ مشن اصلاحاتی عمل میں تعمیری طور پر حصہ ڈالنے اور اپنی مہارت سے فائدہ اٹھانے کے لئے UNCITRAL کے ساتھ اپنی مصروفیت جاری رکھے گا۔

یورپ سے سے مزید