• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

ہم شروع میں ہندوستان کی فلم انڈسٹری سے متاثر تھے، وزیراعظم


وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ ہم شروع میں ہندوستان کی فلم انڈسٹری سے متاثر تھے۔ ہم غلط سمت میں چلے گئے اور وہاں کی فلموں کو کاپی کرنے لگے، کاپی کی کوئی اہمیت نہیں صرف اوریجنل کی ہی اہمیت ہے، چاہتا ہوں فلم انڈسٹری میں نئی سوچ آئے، فلم انڈسٹری میں ہالی ووڈ یا بالی ووڈ نہیں اپنی سوچ اور ثقافت نظر آنی چاہیے۔

اسلام آباد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ آئی ایس پی آر کو شارٹ فلم فیسٹول پر خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔

عمران خان نے کہا کہ ہار سے ڈرنے والا کبھی نہیں جیت سکتا، پاکستان میں فلم انڈسٹری کا ارتقاء دیکھا ہے، شارٹ فلم کی ترقی کے  لئے نوجوانوں کو وظائف دیں گے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ فنڈز جمع کرنے کے لئے نصرت فتح علی خان کو لےکر جاتا تھا، بیرون ملک نصرت فتح علی خان کے بہت مداح تھے، جنہوں نے نصرت فتح علی خان کی کاپی کی، انہیں کوئی پذیرائی نہیں ملی۔

عمران خان نے کہا کہ دنیا میں آئیڈیاز کو پذیرائی ملتی ہے، ہم نے فلمیں بنانے میں اپنی سوچ کے بجائے دوسروں کا کلچر اپنا لیا، ہمارے ٹی وی نے بہترین کام کیا جو بھارت میں دیکھاجاتا ہے، اپنی سوچ لے کر آئیں اور ناکامی سے نہ گھبرائیں، ہارنے سے ڈرنے والا کبھی اچھا کھلاڑی نہیں بنا۔

وزیراعظم نے کہا کہ ینگ فلم میکرز نے پاکستان کےکلچر کو آگے لانےکی کوشش کی، کسی کو اندازہ نہیں ہے کہ پاکستان میں کیسی کیسی نعمتیں ہیں، ماضی میں تاریخی سیاحتی مقامات پر توجہ نہیں دی گئی، ہم دے رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں 12 کلامیٹک زونز ہیں، پاکستان میں ٹیلنٹ کی کمی نہیں، پاکستان میں سیاحت میں بہت زیادہ پوٹینشل موجود ہے، جو قدرتی نظارے فلموں سے سامنے آتے ہیں وہ کسی اور طرح نظر نہیں آتے۔

وزیراعظم نے کہا کہ سیاحت کے فروغ کیلئے خصوصی اقدامات کئے جارہے ہیں، سافٹ امیج خود داری سے آتا ہے، سافٹ امیج کو پروموٹ کرنا ہے تو پاکستانیت کو پروموٹ کریں۔

عمران خان نے کہا کہ ہماری فلم انڈسٹری ہالی ووڈ اور بالی ووڈ سےمتاثر ہے، کرکٹ کے دوران کہا جاتا تھا کہ ہم انگریز سے نہیں جیت سکتے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ ہمارے فلم سازوں کے پاس موقع ہے دنیا کو پاکستان دکھائیں، ہمارے سیاستدان چھٹیاں منانے لندن چلے جاتے ہیں، رسک کے بغیر کوئی آج تک بڑا بزنس مین نہیں بنا۔

قومی خبریں سے مزید