• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

سائنسدانوں کی شہاب ثاقب کے قدیم ٹکڑوں سے کائنات کی ابتدا کا کھوج لگانے کی کوشش

انگلستان کی لو بورو یونیورسٹی کے سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ خلا سے زمین پر گرنے والے قدیم شہابی پتھروں (شہاب ثاقب کے چھوٹے ٹکڑے) سے زمین پر زندگی کی اصل ابتدا کا پتہ لگایا جاسکے گا۔ 

یہ سائنسدان ایسے چھوٹے چارکول رنگ کے خلا سے گرنے والے ان پتھروں کا تجزیہ کررہے ہیں تاکہ ان کے اسٹرکچر اور کمپوزیشن کا اندازہ لگایا جاسکے اور اسے اس سوال کا جواب ملے کہ کائنات کی ابتدا کب ہوئی اور ممکنہ طور پر ہماری اپنی اصلیت کا بھی پتہ چل سکے۔

اس حوالے سے یہ سائنسدان چار ارب ساٹھ کروڑ سال پرانے ایک شہابی پتھر کا تجزیہ کررہے ہیں یہ شہابی پتھر ایک گھوڑے کی نال پر نقش تھا اور ممکنہ طور پر یہ خلاء سے گرنے والے ملبے کا بچا کچا حصہ ہو۔

انکا گمان ہے کہ انھیں اس سے پتہ چل سکے گا کہ کب نظام شمسی کی تخلیق ہوئی اور زندگی اور زمین کی ابتدا کب سے ہوئی، اس کا بھی ممکنہ طور پر جواب مل سکے گا۔

دلچسپ و عجیب سے مزید