• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
,

قومی انڈر 23 فٹبال ، اعزاز بلوچستان کے نام

پاکستان فٹ بال فیڈریشن کے زیراہتمام کھیلی جانے والی قومی انڈر 23 فٹ بال چیمپئن کا شاندار اختتام بلوچستان بازیگر کی فتح پر ہوا۔ سیف اللہ کے فیصلہ کن گول کی بدولت بلوچستان بازیگر نے خیبر ایگلز کو شکست دے کر قومی ٹائٹل حاصل کیا۔ ٹورنامنٹ میں ملک بھر کی بارہ ٹیموں نے حصہ لیا جنہیں چار گروپس میں تقسیم کیا گیا تھا۔ گروپ اے میں سندھ قلندرز، کے پی کے فالکن اور کشمیر کنگز، گروپ بی میں بلوچستان بازیگر، پنجاب واریئرز اور گلگت مارخورز، گروپ سی میں کے پی کے ہزارہ اسٹارز، بلوچستان زوراور اور خیبر ایگلز، گروپ ڈی میں شان پنجاب، سندھ سینٹس اور اسلام آباد ٹائیگرز شامل تھیں۔ ایبٹ آباد کے کنج فٹ بال گرائونڈ ایبٹ آباد میں کھیلی جانے والی چیمپئن شپ کے فائنل میں خیبر ایگلز اور بلوچستان بازیگر کی ٹیموں کے درمیان میچ مقررہ وقت پر بغیر کسی گول کے برابر رہا۔ 

میچ کو فیصلہ کن بنانے کیلئے30 منٹ کا اضافی وقت دیا گیا جس میں بلوچستان بازیگر کے سیف اللہ نے خوبصورت گول کرکے اپنی ٹیم کو 1-0 کی فتح دلوائی۔ تیسری پوزیشن کے مییچ میں کے پی کے فالکن نے اسلام آباد ٹائیگرز کو 2-1 کی شکست دی۔ اختتامی تقریب کے مہمان خصوصی رکن قومی اسمبلی علی خان جدون نے ٹیموں اور کھلاڑیوں میں انعامات تقسیم کئے۔ 

اس موقع پر پاکستان فٹ بال فیڈریشن کے صدر انجینئر سید اشفاق حسین شاہ، نائب صدر ملک محمد عامر ڈوگر، سیکرٹری جنرل نوید اکرم، کانگریس اراکین چوہدری فقیر محمد اور چوہدری محمد سلیم کے علاوہ اسلام آباد فٹ بال ایسوسی ایشن جنرل سیکرٹری سید شرافت حسین بخاری، سابق فٹ بالر شاہد شنواری اور شائقین کی کثیر تعداد بھی موجود تھی۔ 

فائنل جیتنے والی ٹیم بلوچستان بازیگرکو دو لاکھ روپے مع ٹرافی اور خیبر ایگلز کو ڈیڑھ لاکھ روپے اور ٹرافی دی گئی۔ تیسری پوزیشن حاصل کرنے پر کے پی کے فالکن کو ایک لاکھ روپے اور ٹرافی کا حقدار قرار دیا گیا۔ پنجاب واریئرز کو فیئر ٹرافی اور پچاس ہزار روپے دیئے گئے۔ چیمپئن شپ کا بہترین کھلاڑی کے پی کے فالکن اسد اللہ کو جبکہ ٹاپ اسکورر بلوچستان زوراور کے زوہیب ایوب اور بہترین گول کیپر بلوچستان بازیگر کے کامران خان کو پچیس، پچیس ہزار روپے کی انعامی رقم دی گئی۔ 

اس موقع پر پاکستان فٹ بال فیڈریشن کے نائب صدر عامر ڈوگر نے کہا کہ گزشتہ پانچ سال کے دوران کھیل کا جتنا نقصان ہوا ہے اس سے پوری پاکستانی قوم اچھی طرح آگاہ ہے۔ ہماری خواہش ہے سب کے ساتھ مل کر اس کھیل کی ترقی کیلئے اپنا کردار ادا کیا جائے۔

اسپورٹس سے مزید
کھیل سے مزید