• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

غیر اخلاقی فلمیں بنانے پر شوہر کی گرفتاری، شلپا شیٹی کا پہلا بیان سامنے آگیا

ممبئی (آئی این پی) بھارتی اداکارہ شلپا شیٹی کی جانب سے شوہر کی گرفتاری کے بعد سوشل میڈیا پر پہلی پوسٹ شیئر کی گئی ہے جس میں انہوں نے شوہر کی گرفتاری کے بعد خود کے لیے پیش آنے والی مشکلات سے متعلق بات کی ہے۔ ممبئی پولیس کی کرائم برانچ سیل کی جانب سے غیر اخلاقی فلمیں بنانے کے الزام میں اداکارہ شلپا شیٹی کے شوہر راج کندرا کو گزشتہ دنوں گرفتار کر لیا گیا تھا، پولیس کے مطابق راج کندرا کے خلاف غیر اخلاقی فلم بنانے کا کیس رواں برس فروری میں درج ہوا تھا اور وہ اس کیس کے کلیدی کردار بھی ہیں جبکہ راج کندرا کے خلاف واضح ثبوت بھی موجود ہیں۔اس ساری صورتحال کے دوران شلپا شیٹی خاموش اور ان کے سوشل میڈیا اکاونٹ غیر متحرک تھے جبکہ اب ان کی جانب سے اپنے انسٹا گرام اکاونٹ پر ایک اسٹوری شیئر کی گئی ہے جس میں انہوں نے آنے والے دنوں میں پیش آنے والی مشکلات سے متعلق جیمز تھربر کا ایک قو ل شیئر کیا ۔شلپا شیٹی کی جانب سےانگریزی میں شیئر کیے گئے نوٹ میں کہنا ہے کہ غصے میں پیچھے اور خوف میں آگے کی جانب مت دیکھو بلکہ بیدار رہو اور اپنے ارد گرد نظر رکھو۔مذکورہ نوٹ میں شلپا شیٹی کی جانب سے اپنے پیغام میں مزید کہنا ہے کہ جن لوگوں نے ہمیں تکلیف پہنچائی ہوتی ہے ہم غصے میں ان لوگوں کو ماضی میں دیکھتے ہیں، ہم مایوس ہوتے ہیں اور اِسے محسوس کرتے ہیں، خود کو بد قسمت سمجھتے ہیں کہ ہم نے یہ صورتحال برداشت کی، ہم خوف میں آگے کی جانب دیکھتے ہیں کبھی ہم اپنے فرائض نہ کھو بیٹھیں، کسی بیماری سے دو چار نہ ہو جائیں یا کسی اپنے پیاری کی موت کا سامنا نہ کرنا پڑ جائے، وقت کی ضرورت ہے کہ ہم حال میں جئیں اور حال سے متعلق سوچیں، اس کی فکر نہ کریں کہ کیا ہوا یا آگے کیا کیا ہوسکتا ہے مگر حالات حاضرہ سے مکمل طور پر واقف رہیں۔شلپا شیٹی کی جانب سے شیئر کیے گئے قول میں مزید لکھا گیا ہے کہ گہری سانس لیں اور خود کو خوش قسمت محسوس کریں کہ آپ زندہ ہیں، سوچیں کہ آپ ماضی کی مشکلات سے بچے رہے ہیں اور مستقبل کی مشکلات سے بھی بچے رہیں گے، آپ کو اپنی زندگی گزارنے کے لیے کسی چیز سے غافل ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔واضح رہے کہ45 سالہ راج کندرا سمیت دیگر 11 لوگوں کو فحش فلمیں بنانے اور پھر موبائل ایپس پر پھیلانے کے سبب گزشتہ دنوں گرفتار کیا گیا ہے۔

دل لگی سے مزید