• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

لاہور میں جنسی ہراسگی کے واقعات میں کمی نہ آسکی


لاہور میں جنسی ہراسگی کے واقعات میں کمی نہ آ سکی، ایک ہی دن لڑکیوں کو سرِعام تنگ کرنے کے تین واقعات منظرِعام پر آگئے، سی سی ٹی وی ویڈیو سامنے آنے پر پولیس نے مقدمات درج کرکے تینوں ملزمان کو گرفتار کرلیا۔

سی سی ٹی وی میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ایک اوباش نوجوان پرانی انار کلی میں راہ چلتی طالبات کا پیچھا کرتا ہے، طالبات سڑک عبور کرنے کے لیے ڈیوائیڈر پر کھڑی ہوئیں تو اوباش نوجوان نے نازیبا حرکات کیں اور اُن سے فون نمبر مانگا، لڑکیوں کا شور سن کر لوگوں نے اوباش نوجوان کو پکڑ لیا اور درگت بنانے کے بعد پولیس کے حوالے کر دیا۔

جنسی ہراسگی کے دوسرے واقعے کی فوٹیج میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ہربنس پورہ میں ایک خاتون گلی سے گزر رہی ہے، پیلی شرٹ والا موٹرسائیکل سوار بار اس کا راستہ روکتا ہے، خاتون راستہ بدلتی ہے لیکن اوباش باز نہ آیا اور مسلسل آوازے کستا اور اشارے کرتا رہا۔

تیسرا واقعہ قلعہ گجر سنگھ میں پیش آیا جہاں اسکول میں چھٹی کے وقت اوباش نوجوان طالبات سے دست درازی کی اور اشارے بازی کرتا رہا۔

ڈولفن اسکواڈ نے اوباش کو موقع پر ہی پکڑ لیا۔

قومی خبریں سے مزید