• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

طوفان ’گلاب‘ کراچی سے 2200 کلو میٹر دور، تیسرا الرٹ جاری

محکمۂ موسمیات نے ایک بار پھر کہا ہے کہ پاکستان کے کسی ساحلی مقام کو سمندری طوفان ’گلاب‘ سے کوئی خطرہ نہیں۔

محکمۂ موسمیات نے سمندری طوفان ’گلاب‘ سے متعلق تیسرا الرٹ جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس وقت طوفان کراچی سے 22 سو کلو میٹر کے فاصلے پر ہے۔

محکمۂ موسمیات کے مطابق خلیجِ بنگال میں بننے والا سمندری طوفان ’گلاب‘ مغرب کی جانب بڑھ رہا ہے، سمندری طوفان کے آج شام یا رات تک بھارت کی ساحلی پٹی اوڑیسہ اور آندھرا پردیش سے گزرنے کے امکانات ہیں۔

سمندری طوفان سے متعلق محکمۂ موسمیات نے بتایا ہے کہ اس وقت سمندری طوفان کراچی سے 22 سو کلو میٹر کے فاصلے پر ہے، تاہم پاکستان کی ساحلی پٹی کو اس سسٹم سے کوئی خطرہ نہیں ہے۔

اس سے قبل ایک بیان میں محکمۂ موسمیات نے کہا تھا کہ خلیجِ بنگال میں سمندری طوفان کے سبب سندھ میں 28 ستمبر سے بارشیں متوقع ہیں۔

واضح رہے کہ خلیجِ بنگال میں بننے والا سمندری طوفان ’گلاب‘ آج شام بھارتی ریاستوں آندھرا پردیش اور اوڑیسہ کے ساحلوں سے ٹکرائے گا۔

بھارتی محکمۂ موسمیات کے مطابق طوفان ’گلاب‘ 95 کلو میٹر فی گھنٹہ کی رفتار کی ہواؤں کے ساتھ اوڑیسہ کے علاقے گوپال پور اور آندھرا پردیش کے علاقے کالینگا پٹنم کے درمیانی ساحلی علاقوں سے ٹکرائے گا۔

طوفان کی تباہ کاریوں سے بچنے کے لیے دونوں بھارتی ریاستوں کے ساحلی علاقوں سے لوگوں کا انخلاء کرایا جا رہا ہے۔

قومی خبریں سے مزید