آپ آف لائن ہیں
اتوار 5؍شعبان المعظم 1439ھ 22؍اپریل2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
x
راولپنڈی (ساجد چوہدری، اپنے نامہ نگار سے ) محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن پنجاب حکام کی مبینہ لاپرواہی کے باعث راولپنڈی سمیت جہلم، اٹک، چکوال اور پنجاب کےبعض دیگر اضلاع میں پچھلے ایک ماہ سے سٹکرز اور رجسٹریشن بکس نہ ہونے کے باعث ہزاروں مالکان کو موٹر سائیکلوں کی رجسٹریشن بکس نہیں مل سکیں،ایکسائز ذرائع نے بتایا کہ پہلے سٹکرز نہیں تھے وہ تو چار روز قبل آگئے ہیں مگر پچھلے ایک ماہ سے گرین رجسٹریشن بکس نہ ہونے کی وجہ سے شہری اپنی رجسٹریشن بکس کیلئے دفاتر کے چکر لگاتے رہتے ہیں مگر وہ مایوس ہو کر گھروں کو واپس چلے جاتے ہیں، شہریوں کا کہنا ہے کہ ایکسائز حکام ون ونڈو کے تحت شہریوں کے تمام کام کی بات تو کرتے ہیں مگر پچھلے ایک ماہ سے وہ اپنے موٹر سائیکلوں کی رجسٹریشن بکس کے حصول کیلئے مارے مارے پھر رہے ہیں مگر موٹر برانچز کا عملہ کہتا ہے کہ انہیں لاہور ہیڈکوارٹر سے ہی گرین بکس نہیں آ رہی ہیں وہ آگے کیسے ان کو جاری کرسکتے ہیں، اس حوالے سے موٹر برانچ کے حکام کا کہنا تھا کہ انہوں نے لاہور ہیڈکوارٹر کے حکام نے یقین دہانی کروائی ہے کہ آئندہ ایک دو روز میں گرین رجسٹریشن بکس فراہم کر دی جائیں گی، بعض موٹر برانچ کے اہلکاروں کا کہنا تھا کہ اعلٰی سطح پر یہ بات زیر غور تھی کہ سٹکرز اور رجسٹریشن بکس کی جگہ سمارٹ کارڈز

x
Advertisement

شروع کئے جائیں گے جس کے نتیجہ میں پرانی بلیو رجسٹریشن بکس کی فراہمی موٹر رجسٹرنگ اتھارٹیز کو روک دی گئی تھی جس کے بعد پہلے سٹکرز کی فراہمی روکی گئی اور پھر گرین بکس روک دی گئیں تاہم اب کہا جا رہا ہے کہ جلد ہی گرین بکس کی فراہمی دوبارہ شروع کر دی جائے گی۔

​​
Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں