آپ آف لائن ہیں
پیر 5؍رمضان المبارک 1439ھ 21؍مئی 2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
اسلام آباد، کراچی(طاہر خلیل، نیوز ڈیسک) سابق وزیر اعظم نواز شریف کے ممبئی حملوں کے بارے میں بیان سے نئی بحث چھڑ گئی، سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے ردعمل میں کہاکہ پوری ذمہ داری سے کہتا ہوں ممبئی حملوں کے حوالے سےکیس میں تعطل اور سست روی پاکستان کی وجہ سے نہیں بلکہ ہندوستان کی طرف سے عدم تعاون اور ہٹ دھرمی کی وجہ سے ہوئی۔ دوسری جانب مسلم لیگ (ن) کی رہنما ماروی میمن نے کہاکہ سابق وزیر داخلہ دھرتی کے سپوت ،ممبئی حملوں پربیان حب الوطنی اورحقائق پرمبنی ہے۔ تفصیلات کےمطابق چوہدری نثار نے کہا ہےکہ بطور وزیر داخلہ کیس کے تمام مراحل سے مکمل طور پرآگاہ رہا ہوں کیونکہ ایف آئی اے کیس کی تحقیقات کر رہا تھا ، یہ بات واضح ہے کہ ہندوستان کی دلچسپی واقعے کی صاف وشفاف تحقیقات اور اسے منطقی انجام تک پہنچانے میں نہیں بلکہ وہ اسے اپنے مذموم سیاسی مقاصد کیلئے استعمال کرنا چاہتا تھا، بھارتی حکومت نے واقعے کو بین الاقوامی طور پر پاکستان کو بدنام کرنے کے آلہ کار کے طور پر استعمال کیا جو وہ آج تک کر رہا ہے ، یہ واقعہ ہندوستان میں ہوا اور اسکے 90فیصد شواہد اور حقائق ہندوستان کے پاس تھے، ہماری تمام تر کوششوں کے باوجود بھی بھارتی حکومت متعلقہ شواہد ہمارے تحقیقاتی ادارے کیساتھ شیئر کرنے سے گریزاں تھی، یہی نہیں

x
Advertisement

بلکہ وہ تو ہماری عدالتوں کی جانب سے قائم کمیٹی سے تعاون کیلئے بھی تیار نہیں تھی، کمیٹی کو ہندوستان آنے تک کی اجازت نہیں دی گئی، بھارتی سرکار کی اس کیس کی تہہ تک پہنچنے میں عدم دلچسپی کی بڑی مثال اور کیا ہو سکتی ہے کہ ہماری تحقیقاتی ٹیم کو اس کیس سے منسلک واحد ثبوت سے سوالات کرنے کا موقع تک فراہم نہیں کیا گیا، ایک ایسا ملک جہاں پھانسی کی سزا سے متعلق کیسز سالہا سال التوا کا شکار رہتے ہیں وہاں انتہائی اہم کیس کے واحد ثبوت اجمل قصاب کو انتہائی پھرتی سے پھانسی پر لٹکا کر منظر عام سے ہٹا دیا گیا تاکہ اصل حقائق منظر عام پر آنے کا باب مکمل طور پر بند کر دیا جائے ، ممبئی حملہ کیس کو دنیا میں کسی عدالتی یا انصاف کی بنیادوں پرنہیں بلکہ سیاسی بنیادوں پرپاکستان مخالفت کا ذریعہ بنا دیا گیا، بھارتی سرکار سے کیس میں تعاون کی بارہادرخواستیں اور انکی طرف سے عدم تعاون اور ہٹ دھرمی ریکارڈ پر ہے،یہ بات بھی ریکارڈ پر ہے کہ ہم نے دہشتگردی کے ہر واقعے پر انفارمیشن شیئرنگ کے حوالے سے ہندوستان کو مکمل تعاون فراہم کیا جبکہ پاکستان کے اندر دہشتگردی واقعات کی تحقیقات، دہشتگردوں کے معاونین اور سرپرستوں کو بے نقاب کرنے کی کوششوں، کلبھوشن یادیو جیسے واقعات پر ہندوستان کی جانب سے ہمیشہ ہٹ دھرمی اورعدم تعاون کا مظاہر ہ کیا جاتا رہا ہے، چوہدر ی نثار نے کہا ممبئی حملوں کے حوالے سے پاکستان کی طرف سے تعاون کی ایک ایک درخواست، خط اور اعلان ریکارڈ پر ہے اور ایف آئی اے کے پاس محفوظ ہے جبکہ ہندوستان کی جانب سے عدم تعاون، عدم دلچسپی، حیل و حجت اور ہٹ دھرمی بھی ریکارڈکا حصہ ہے۔ دوسری جانب مسلم لیگ (ن) کی رہنما ماروی میمن نےچوہدری نثارکےبیان کی حمایت کرتے ہوئےکہا کہ ممبئی معاملے پر چوہدری نثارکا بیان حب الوطنی اور حقائق پرمبنی ہے، چوہدری نثار دھرتی کے سپوت ہیں ،اس معاملےپردوسرےخاموش ہیں لیکن کم از کم میں نہیں۔ماروی میمن کا کہنا تھا کہ پرچم کیلئے اصل دشمن کیخلاف ہمت کر کے اٹھناحب الوطنی ہے، دفاع وطن کیلئے اپنے حلف پرثابت قدمی دکھانا بھی حب الوطنی ہے۔

​​
Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں