آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعرات 20؍ ذوالحجہ 1440ھ 22؍اگست 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

عدالتی معاملات الجھے ہوئے اورتنازعات میں گھرے ہوئےپاکستان کرکٹ بورڈ نے گورننگ بورڈکا اجلاس طلب کرنےکے بجائے پی سی بی بورڈ آف گورنرز کے اکثریتی اراکین سے سرکو لیشن ریزولوشن کے ذریعے اہم فیصلوں کی منظوری حاصل کر لی یہ فیصلے کوئٹہ کی ہنگامہ خیز میٹنگ کے بعد التواء کا شکار تھے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین احسان مانی نے اپنے زیادہ تر کرکٹ سے وابستہ اختیارات ایم ڈی وسیم خان کے سپرد کردیئے ہیں اور اب احسان مانی کے اختیارات کم ہوگئے ہیں۔

احسان مانی کی درخواست پر یہ اختیارات وسیم خان کے پاس چلے گئے ہیں۔کوئٹہ کے اجلاس میں ہنگامہ آرائی کے بعد یہ معاملہ التوا ء کا شکار ہوگیا تھا۔

پی سی بی بورڈ آف گورنرز کے اکثریتی اراکین سے سرکو لیشن ریزولوشن کے ذریعےایم ڈی کی حیثیت کو بھی تسلیم کرا لیا گیا ہے۔کوئٹہ میٹنگ میں اکثر اراکین نے ایم ڈی کی تقرری کوغیر قانونی قرار دیا تھا۔

ذرائع کا کہنا ہے اب وسیم خان زیادہ تر کرکٹ کے فیصلے خود کرسکیں گے۔جس میں کپتان ،کوچز ،سلیکٹرز اور دیگر اہم تقرریاں شامل ہیں۔2014میں بورڈ آف گورنرز نےیہ تمام اختیارات نجم سیٹھی کوچیئرمین ایگزیکٹیو بورڈ کی حیثیت سے دیئے تھے۔

بی او جی کے پاس اختیارات منتقل کرنے کا آئینی حق ہے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ جب بھی بورڈ آف گورنرز کا اجلاس ہوگا سرکو لیشن ریزولوشن کے ذریعے لئے گئے فیصلوں کی توثیق کرانا لازمی ہوگی،  یہ نئی پیش رفت اس وقت سامنے آئی جب دو ہفتے بر طانیہ میں گذارنے کے بعد منگل کو چیئرمین احسان مانی نے آفس جوائن کیا اور بدھ کو ایم ڈی وسیم خان نے بھی دو ہفتے بعد اپنی ذمے داریاں سنبھال لیں۔

بدھ کو رات گئے پی سی بی نے اعلان کیا کہ گورننگ بورڈ نے دو ہزار سترہ، اٹھارہ کے آڈٹ شدہ اکاؤنٹس کی منظوری دے دی ہے۔ گورننگ بورڈ نے سرمایہ کاری کی پالیسی کی بھی منظوری دی ہے۔ منظوری دینے والے اراکین میں احسان مانی، اسد علی خان، لیفٹنٹ جنرل مزمل حسین ،کبیر احمد خان، ایاز بٹ اور شاہ ریز روکڑی بھی شامل ہیں۔کبیر خان،ایاز بٹ اور شاہ ریز روکڑی نے نعمان بٹ کے ساتھ مل کر بغاوت کی تھی پھر اپنے پہلے فیصلے پر یوٹرن لیا۔

پی سی بی اعلامیے کے مطابق باغی گروپ کے سربراہ نعمان بٹ کا کیس ایڈجو ڈی کیٹر کے سامنے چل رہا ہے اس لئے وہ آئین کے تحت کسی اجلا س کا حصہ نہیں بن سکتے۔

بورڈ آف گورنرز میں حبیب بینک کے متبادل کا اعلان ہونا باقی ہے۔ایک اور باغی رکن کوئٹہ کے شاہ دوست کو ڈی نوٹی فائی کیا جاچکا ہے ۔

کھیلوں کی خبریں سے مزید