• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

کنٹونمنٹ بورڈز میں شاپنگ مالز کی اجازت کون دے رہاہے، سندھ ہائیکورٹ

کراچی (اسٹاف رپورٹر) سندھ ہائی کورٹ نے عسکری فور میں رفاہی پلاٹ پر عسکری ٹاور بنانے کیخلاف درخواست پر نوٹس جاری کرتےہوئے ڈپٹی اٹارنی جنرل و دیگر سے جواب طلب کرلیا۔

عدالت نے ریمارکس دیئے کہ کنٹونمنٹ بورڈز میں بڑے بڑے شاپنگ مالز کی اجازت کون دے رہاہے۔ جسٹس سید حسن اظہر رضوی اور جسٹس مسز کوثر سلطانہ حسین پر مشتمل دو رکنی بنچ کے روبرو عسکری فور میں رفاہی پلاٹ پر عسکری ٹاور بنانے سے متعلق پارک کی اراضی پر عسکری ٹاور تعمیر کرنے کیخلاف مکینوں کی درخواست کی سماعت ہوئی۔ 

درخواست گزار کے وکیل نے موقف دیا کہ عسکری فور نیو پلیکس سے متصل ایک رفاہی پلاٹ موجود ہے۔ مذکورہ پلاٹ پارکنگ اور عید کی نماز کیلئے بھی استعمال ہوتا ہے۔ 

کنٹونمنٹ بورڈ نے پلاٹ کاٹ کر عسکری ٹاور کیلئے مختص کر دیا ہے۔ ریزیڈنٹس کمیٹی کی بجائے کنٹونمنٹ میں بیٹھے افسران نے ہی فیصلہ کر لیا۔ 

رفاہی پلاٹوں پر تجاوزات کے خاتمے کیلئے سپریم کورٹ کا حکم موجود ہے۔ لہٰذا عدالت عالیہ سے استدعا ہےکہ عسکری فور میں غیرقانونی تعمیرات کو روکا جائے۔ 

جسٹس سید حسن اظہر رضوی نے ریماکس دیئے کنٹونمنٹ بورڈز میں ہو کیا رہا ہے۔ عدالت نے آبزرویشن دیتے ہوئے کہا کہ کنٹونمنٹ بورڈ میں 13، 13 منزلہ عمارتیں کیسے بن رہی ہیں۔

اہم خبریں سے مزید