آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
اتوار17؍ ربیع الثانی 1441ھ 15؍ دسمبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

سنجے دت کی نئی فلم پر فواد چوہدری کیوں برس پڑے؟

اداکار سنجے دت کی نئی فلم ’پانی پت‘ کا ٹریلر


وفاقی وزیر برائے سائنس وٹیکنالوجی فواد چوہدری بالی ووڈ اداکار سنجے دت کی نئی فلم ’پانی پت‘ میں تاریخ مسخ کرنے اور مسلمان حکمرانوں کو ظالم و جابر دکھانے پر بالی ووڈ پر برس پڑے۔

فلم ’پانی پت‘ شوٹنگ کے آغاز سے ہی تنازعات کا شکار ہے۔ آشوتوش گواریکر کی ہدایت کاری میں بننے والی اس فلم کی کہانی افغانستان کے بادشاہ احمد شاہ ابدالی اورمرہٹوں کے درمیان لڑی جانے والی مشہور پانی پت کی جنگ پر مبنی ہے، جس میں سنجے دت نے افغان بادشاہ ’احمد شاہ ابدالی‘ کا کردار نبھایا ہے۔

سنجے دت کے علاوہ فلم میں اداکار ارجن کپور نے مرہٹا جنگجو ’سدا شیو راؤ باہو‘ اور اداکارہ کریتی سنن نے ’پارواتی بائی‘ کا کردار ادا کیا ہے۔

فلم میں دکھائے جانے والے تاریخی حقائق پر جہاں افغان شہریوں کی جانب سے شدید غصے کا اظہار کیا گیا ہے وہیں وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے بھی تاریخ کو مسخ کرنے پر بالی ووڈ کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا ہے کہ ’جب بیوقوف لوگ آر ایس ایس کے نظریے کے تحت تاریخ کو دوبارہ لکھنے کی کوشش کرتے ہیں تو ہم اسی کی اُمید کرسکتے ہیں، آگے آگے دیکھئے ہوتا ہے کیا۔‘

دوسری جانب افغان عوام کا کہنا ہے کہ فلم میں تاریخ کے کچھ حصوں کو تبدیل کیا گیا ہے اور تاریخ کو مسخ کرکے من گھڑت کہانی شامل کی گئی ہے۔

اداکار سنجے دت نے رواں ماہ فلم کا پوسٹر شیئر کیا تھا جس پر بھارت میں سابق افغانی سفیر ڈاکٹر شاہدہ ابدالی نے ٹوئٹ کرتے ہوئے تشویش کا اظہار کیا تھا۔ انہوں نے اپنے ٹوئٹ میں سنجے دت کو مخاطب کرتے ہوئے لکھا تھا کہ ’تاریخی طور پر بھارتی سینما ہند افغان تعلقات کو مستحکم کرنے میں کارآمد رہا ہے۔ مجھے اُمید ہے فلم ’پانی پت‘ ہماری مشترکہ تاریخ کو ذہن میں رکھ کر بنائی گئی ہے۔‘

بھارت میں تعینات افغان سفیر طاہر قادری نے افغان نیوز ایجنسی سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم اس معاملے پر بھارتی حکمرانوں سے رابطے میں ہیں اور فلم کے معاملے پر افغانی عوام کے جذبات بھارتی حکمرانوں تک پہچادیئے ہیں۔

واضح رہے کہ اس سے قبل سنجے لیلا بھنسالی کی فلم’پدماوت‘ میں بھی مسلم حکمران علاؤ الدین خلجی کو ظالم اور سفاک حکمران بنا کر پیش کیا گیا تھا۔

پانی پت کی مشہور تیسری جنگ افغانی حکمران احمد شاہ ابدالی اور مراٹھاؤں (مرہٹوں) کے درمیان1761 میں لڑی گئی تھی۔ اس جنگ میں احمد شاہ ابدالی نے مرہٹے جنگجوؤں کو ہرادیا تھا۔ فلم 6 دسمبر کو ریلیز کی جائے گی۔

انٹرٹینمنٹ سے مزید