آپ آف لائن ہیں
بدھ14؍ذی الحج1441ھ5؍اگست 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

وفاقی کابینہ کے اہم ترین اجلاس کی اندرونی کہانی

وفاقی کابینہ کے اہم ترین اجلاس کی اندرونی کہانی


وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت ہونے والے کابینہ کے اہم ترین اجلاس کی اندرونی کہانی سامنے آگئی ۔

وزیراعظم نے نوازشریف کی بیرون ملک روانگی سے متعلق لاہور ہائی کورٹ کے فیصلے پر وفاقی کابینہ سے مشاورت کی۔

اجلاس میں کابینہ کی اکثریت نے نوازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے سے متعلق لاہور ہائی کورٹ کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج نہ کرنے کا مشورہ دیا۔

وزیراعظم نے کابینہ کی اکثریت کی رائے سامنے آنے پر کہا کہ میں خود بھی اس فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کے حق میں نہیں ہوں۔

عمران خان کے گُڈوِل جیسچر پر کابینہ نے ان کے خیالات کی توثیق کی اور انہیں لائق تحسین بھی قرار دیا۔

وزیراعظم نے اپنے خطاب میں کہا کہ ہم نے ہمیشہ عدالتوں کا احترام کیا ہے، لاہور ہائی کورٹ کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج نہیں کریں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ضمانتی بانڈ کی شرط نواز شریف کی واپسی کو یقینی بنانے کے لیے تھی، عدالت نے بھی نواز شریف سے ضمانت لے لی ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے امید ظاہر کی کہ شریف برادران عدالتی فیصلے کو مانیں گے اور صحتیاب ہوکر مقررہ مدت میں واپس آئیں گے۔

ذرائع کے مطابق وزیر اعظم نے کہا نواز شریف کو بیرون ملک جانے کی اجازت دینے کا مقصد ان کی مرضی کی جگہ اور مرضی کے ڈاکٹر سے علاج کرانا تھا۔

قومی خبریں سے مزید