• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

مولانا کو پلان ’ایگزٹ‘ کا سہارا لینا پڑا ہے، فردوس عاشق

وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ مولانا صاحب عوام نے آپ کو مسترد کرکے ثابت کیا ہے کہ وہ انتہا پسندی کے ساتھ نہیں، عوام نے آپ کے سارے پلان چوپٹ کر دئیے اور آپ کو پلان ’ایگزٹ‘ کا سہارا لینا پڑا ہے ۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک بیان میں فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ مولانا فضل الرحمٰن جس طرح خالی ہاتھ اسلام آباد آئے تھے، ویسے ہی خالی ہاتھ واپس لوٹ گئے ہیں۔

انہوں نے مولانا فضل الرحمٰن کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ کی سیاسی جڑیں عوام نے کاٹیں لیکن آپ جمہوریت سے بدلہ لینے پر تل گئے ہیں، قوم نے دیکھ لیا کہ کون اسلام آباد سے چلتا بنا اور ہل کر باہر جا گرا۔

فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ ’روڈز بلاک‘ پلان بھی عوام نے مسترد کر دیا ہے، مولانا جمہوریت کے راستے میں انا کی رکاوٹیں کھڑی کرکے اپنا سیاسی مستقبل خراب نہ کریں، حلقے میں جائیں، سیاسی طور پر ہلکے نہ ہوں۔

انہوں نے کہا کہ مولانا لشکر کشی اور غیر جمہوری ہتھکنڈوں میں ناکامی کے بعد اپنی خفت مٹانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

معاون خصوصی برائے اطلاعات کا کہنا تھا کہ ہم نے تحمل اور بردباری کا مظاہرہ کرتے ہوئے جمہوری طرز عمل اختیار کیا، آپ کے احتجاج کے حق کو تسلیم کیا۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان کے دھرنے کے خلاف آپ کی نفرت انگیزی اوردھمکیاں تاریخ کا حصہ ہیں، یہ وہی پارلیمان ہے جس میں آپ کے فرزند آپ کی کرسی پر بیٹھے ہیں، ان کی تنخواہ اور مراعات حلال اور جائز ہیں؟

پروگرام ’جیو پاکستان‘ میں فردوس عاشق اعوان کی گفتگو

اس سے قبل جیو نیوز کے پروگرام جیو پاکستان میں گفتگو کرتے ہوئے فردوس عاشق اعوان نے بتایا تھا کہ لاہور ہائی کورٹ نے انڈیمنٹی بانڈ کی شرط مسترد نہیں معطل کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ نوازشریف اور شہبازشریف نے عدالت کو یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ واپس آئیں گے، ہمیں بھی امید ہے کہ نواز شریف عدالتی فیصلے کی پاسداری کرتے ہوئے وطن واپس آئیں گے۔

فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان آئین کی حکمرانی اور قانون کی بالادستی چاہتے ہیں۔

قومی خبریں سے مزید