آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
بدھ3؍ جمادی الثانی 1441ھ 29؍ جنوری 2020ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

خاندانی سیاست جمہوریت کی نفی کرتی ہے، وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ خاندانی سیاست جمہوریت کی نفی کرتی ہے، کامیابی کا بڑا راز یہ ہے کہ آپ کشتیاں جلا کر جاتے ہیں اور جب آپ اپنے وژن پر سمجھوتا کرتے ہیں تو مسلسل نیچے جاتے رہتے ہیں۔

اسلام آباد میں نیشنل سائنس ٹیکنالوجی پارک کے افتتاح کے موقع پر وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ ہمیں یاد ہے کہ پہلے پاکستانی پراعتماد ہوتے تھے، اس خود اعتمادی کی بڑی وجہ میرٹ کا نظام تھا،سول سروس کا امتحان مشکل اور میرٹ پر تھا۔

انہوں نے کہا کہ لوگ کہتے تھے کہ آپ نے فواد چوہدری کو وزیر بنادیا ہے، آپ سائنس اور ٹیکنالوجی کو سنجیدہ نہیں لے رہے ہیں، مگر ایک اچھے کپتان کو علم ہوتا ہے کس کھلاڑی کو کس نمبر کھیلانا ہے، عوام نے سائنس وٹیکنالوجی میں فوادچوہدری کی اب پرفارمنس دیکھ لی ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ پاکستان میں 60 کی دہائی میں بڑے منصوبے شروع کیے گئے، مگر ملک میں میرٹ کا نظام جیسے جیسے گرتا گیا، پاکستان کو بھی اس کا نقصان ہوا۔

وزیراعظم نے کہا کہ اپنی ذات سے نکل کر آگے جانے والے بڑا انسان بنتا ہے، انسان جو پہلے صرف تصور کرتا تھا اس نے اس چیز کو کامیاب کر کے دکھایا، ہمیشہ اپنے دل کی بات پر عمل کرو کیونکہ جنون دل میں ہوتا ہے، میری زندگی کا تجربہ ہے جنون ٹیلنٹ کو ہرا دیتا ہے۔

مولانا رومی کے قول ’جب اللہ نے پر دیے ہیں تو چیونٹیوں کی طرح کیوں رینگ رہے ہو‘ کا حوالہ دیتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ انسان کا جتنا بڑا وژن ہوگا، اتنی کامیابی حاصل کرے گا، تاریخ کسی امیر کو نہیں جانتی، انسانوں کے لیے کچھ کرنے والے کو دنیا جانتی ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ بڑے خواب کی تعبیر کے لئے کشتیاں جلانا پڑتی ہیں، اس میں کوئی کوئی پلان بی اور سی نہیں ہوتا، ابھی ایک پلان بی ہوا پھر سی اور پھر زیڈ ہوجائے گا۔

انہوں نے کہا کہ جو انسان کامیاب ہوتا ہے وہ برے وقت میں خود کو سنبھالتا ہے، کچھ لوگ برے وقت میں شکست خوردہ ہوجاتے ہیں، ہر برا وقت آپ کو اوپر جانے کے لیے تیار کرتا ہے، جب تک آپ خود ہار نہیں مانیں گے آپ کو کوئی ہرا نہیں سکتا۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ زندگی میں کوئی شارٹ کٹ نہیں لیا، ہمارے پاس بادشاہت تھی، جہاں جمہوریت تھی وہ ملک آگے چلے گئے، بادشاہت کبھی بھی جمہوریت کا مقابلہ نہیں کر سکتی۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ جمہوریت میں میرٹ اور جوابدہی کا عمل ہوتا ہے،میں آئندہ 4 سال تک یاد دلاتا رہوں گا کہ ہمیں کس طرح کا پاکستان دیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا تویہاں پورا خاندان سیاست میں آجاتا ہے جو جمہوریت کی نفی ہے، 11 سال ایک شخص پارٹی کا چیئرمین رہے اور پھر کہے جب بارش ہوتی ہے تو پانی آتا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے نیشنل یونی ورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے معیار تعلیم کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ انہیں اندازہ نہیں تھا کہ یہاں کا معیار اتنا اچھا ہے،تقریب میں وزیراعظم نے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کو بھی خراج تحسین پیش کیا۔

قومی خبریں سے مزید