آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل23؍جمادی الثانی 1441ھ 18؍ فروری2020ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

پی ٹی آئی، ایم کیو ایم نے مذاکرات کو مثبت قرار دیدیا

پی ٹی آئی، ایم کیو ایم نے مذاکرات کو مثبت قرار دیدیا


پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) وفد اور متحدہ قومی موومنٹ ( ایم کیو ایم ) پاکستان کے درمیان مذاکرات کا ایک مرحلہ مکمل اگلا دور اسلام آباد میں ہوگا۔

ایم کیو ایم کے عارضی مرکز بہادر آباد پر وفاقی وزیر دفاع پرویز خٹک اور متحدہ کنوینر خالد مقبول صدیقی نے مشترکہ پریس کانفرنس کی۔

خالد مقبول صدیقی اور پرویز خٹک نے مذاکرات کو مثبت قرار دیا، ساتھ ہی قوم کو جلد خوشخبری سنانے کی امید بھی دلائی اور کہا کہ ہم ہمیشہ ساتھ رہیں گے۔

پرویز خٹک نے کہا کہ دونوں جماعتوں کے درمیان تھوڑی بہت غلط فہمیاں پیدا ہوئیں، آج اچھی بات چیت ہوئی۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم ایم کیو ایم کو واپس آنے کی دعوت دیتے ہیں، فیصلہ انہیں کرنا ہے، دونوں جماعتیں کبھی ایک دوسرے سے جدا نہیں ہوں گی۔

وزیر دفاع نے مزید کہا کہ وزیراعظم نے اتحادیوں سے بات چیت کے لیے کمیٹی بنائی ہے، جس میں جہانگیر ترین، اسد عمر و دیگر شامل ہیں۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ ایم کیو ایم سمیت دیگر اتحادی جماعتوں سے بھی ملے ہیں، کوئی اتحادی ہمیں چھوڑ کر نہیں جارہا، حکومت 5 سال مکمل کرے گی۔

پرویز خٹک نے کہا کہ حکومت اور ایم کیو ایم کے درمیان اب کوئی مسئلہ نہیں رہا ہے، ہمارے پاس جادو کی چھڑی نہیں، نیت صاف ہے، جو کمی رہ گئی تھی وہ پوری کردی جائے گی۔

خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ پی ٹی آئی کے وفد کا بہت امیدوں سے انتظار کر رہے تھے، حکومت میں شمولیت سے قبل ہمارے کچھ مطالبات تھے جو مانے گئے جس کے بعد وہ حکومتی وعدے بن گئے، جن کے پورا ہونے کے منتظر رہے۔

انہوں نے کہا کہ کراچی اور سندھ کے شہری علاقوں کے مسائل سے حکومت کو پہلے دن آگاہ کیا تھا، پی ٹی آئی بھی اس بات کی گواہ ہے اور وہ نکات بھی عوام کے سامنے ہیں۔

ایم کیو ایم کنوینر نے مزید کہا کہ ہم سندھ کے شہریوں کا کیس لڑرہے ہیں، وزارت ہمارا مطالبہ تھا ہی نہیں، جتنے مطالبات ہیں، ان پر تاریخوں کے ساتھ روڈ میپ طے ہوا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کو چلانے کے لیے کراچی 65 فیصد ریونیو دے رہا ہے، اٹھارہویں ترمیم وعدہ خلافی کی وجہ سے اختیارات کی نیچے منتقلی کا سبب نہ بن سکی، اس ترمیم کے نام پر عوام کو دھوکا دیا گیا۔

خالد مقبول صدیقی نے یہ بھی کہا کہ آج کے مذاکرات میں اچھی پیشرفت ہوئی، جس سے کراچی کے عوام کو فائدہ ہوگا، حوصلہ افزا گفتگو کے دوران کوئی ناراضی کی بات نہیں ہوئی۔

انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم کے ایم این ایز اور سنیٹرز حکومت کا ساتھ دیتے رہیں گے۔

قومی خبریں سے مزید