آپ آف لائن ہیں
بدھ16؍ربیع الثانی 1442ھ2؍دسمبر 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

حکومت کا عوام پر پیٹرول بم گرانا انتہائی تشویشناک ہے: زاہد خان


عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) کے رہنما زاہد خان کا کہنا ہے کہ حکومت کا عوام پر پیٹرول بم گرانا انتہائی تشویش ناک ہے۔

عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) نے ایک بیان کے ذریعے پیٹرول کی قیمتوں میں اضافے کو مسترد کر دیا ہے۔

ایک بیان میں عوامی نیشنل پارٹی کے رہنما زاہد خان کا کہنا ہے کہ حکومت کا عوام پر پیٹرول بم گرانا انتہائی تشویشناک اور قابلِ مذمت ہے۔

رہنما عوامی نیشنل پارٹی کا مزید کہنا ہے کہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا فیصلہ مافیا کے سامنے گھٹنے ٹیکنے کے مترادف ہے۔

زاہد خان کا یہ بھی کہنا ہے کہ پیٹرول کی قیمتوں میں اضافے کا اثر باقی چیزوں پر بھی پڑے گا اور مہنگائی بڑھے گی، حکمران پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا فیصلہ فوری واپس لیں۔

واضح رہے کہ وفاقی حکومت نے پٹرولیم قیمتوں میں ریکارڈ اضافہ کر دیا جس کا اطلاق 26 جون 2020ء سے ہو گیا یعنی یکم جولائی سے 4 دن پہلے ہی نئی قیمتوں کا اطلاق کر دیا گیا۔

جمعے کو وزیرِ اعظم عمران خان نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمت میں اضافے کی سمری منظور کرلی جس کے بعد وزارتِ خزانہ نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا۔

وزارت خزانہ کی جانب سے جاری کیے گئے نوٹیفکیشن کے مطابق پٹرول 25 روپے 58 پیسے فی لیٹر مہنگا کر دیا گیا ہے جس کے بعد پیٹرول کی نئی قیمت 100 روپے 10 پیسے فی لیٹر مقرر کی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیئے: پاکستان میں پیٹرولیم قیمتوں میں کم اضافہ ہوا، شبلی فراز

ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت 21 روپے 31 پیسے فی لیٹر اضافے کے بعد 101 روپے 46 پیسے، مٹی کے تیل کی قیمت میں 23 روپے 50 پیسے فی لیٹر اضافے کے بعد نئی قیمت 59 روپے 6 پیسے مقرر کی گئی ہے۔

وزارت ِخزانہ کے مطابق لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 17 روپے 84 پیسے فی لیٹر اضافہ کیا گیا ہے اور اس کی نئی قیمت 55 روپے 98 پیسے مقرر کی گئی ہے۔

نوٹی فکیشن میں عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں اضافے کو پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھانے کی وجہ قرار دیا گیا ہے۔

قومی خبریں سے مزید