آپ آف لائن ہیں
منگل4؍صفر المظفّر 1442ھ 22؍ستمبر 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

کرسٹیانو رونالڈو کے نئے حریف علی داعی

پرتگال کے اسٹار فٹبالر کرسٹیانو رونالڈونے انٹر نیشنل کیر ئیر میں 100 گول مکمل کر لیے ، کرسٹیانو رونالڈو نے یوئیفا نیشنز فٹبال لیگ میں سوئیڈن کیخلاف دو گول اسکور کر کے یہ کارنامہ سرانجام دیا اس کے ساتھ ہی وہ یہ سنگ میل عبور کرنے والے دوسرے کھلاڑی بن گئے۔

انٹرنیشنل میچز میں فٹبال کی تاریخ رقم کرنے والے کوئی اور نہیں بلکہ ایک مسلم فٹبالرعلی داعی ہیں،وہ فٹبال کی تاریخ کے پہلےٹاپ اسکورر ہیں جنہوں نے 149انٹرنیشنل میچز میں 109گول داغ کر عالمی ریکارڈ قائم کیا۔

علی داعی 21مارچ1969 کو ایران کے شہر اردابیل میں پیدا ہوئے، انہوں نے 1993 ءسے لیکر2006 ء تک ایرانی ٹیم کی نمائندگی کی اور فرینڈلی، انٹرنیشنل میچز میں 27،اے ایف سی ایشین کپ کوالیفائر میں 23،اے ایف سی ایشن کپ فائنلز میں 14،ایشین گیمز 9 اور فیفا ورلڈ کپ کوالیفائر میں 38گول داغے۔

انہوں نے31مارچ 2004 ءکو 2006ء فیفا ورلڈ کپ کوالیفائر میں ٹیم کو لاؤس کیخلاف ایران کو کامیابی دلانے میں اہم کردار ادا کیا اور دو بار گیند کو جال کی راہ دکھا کرکے گولز کی سنچری مکمل کرنے والے پہلے کھلاڑی بن گئے۔

سابق ایرانی فٹبالر نے 1987ءمیں 19سال کی عمر میں فٹبال کیرئیر کا آغاز کیا، 1993ء میںتہران میں ہونے والے ایکو (اکنامک کارپوریشن آرگنائزیشن) کپ کیلئے علی دائی کو ایرانی ٹیم میں شامل کیا گیا اورانہوں نے پاکستان کیخلاف میچ سے انٹرنیشنل ڈیبیو کیا۔

وہ 1994 ءفیفا ورلڈ کپ کوالیفائر رز کے ٹاپ اسکورر رہے اور 5میچز میں 4بار گیند کو جال کی راہ دکھائی۔

انہوں نے 1996ء اے ایف سی ایشین کپ کے کوارٹر فائنل میں جنوبی کوریاکےخلاف 4گول داغ کر ایران کو 6-2سے کامیابی دلائی، سیمی فائنل میں ایران کا مقابلہ سعودی عرب سے تھا ۔دونوں کے درمیان مقررہ وقت تک میچ برابر تھا تاہم میچ کا فیصلہ پینالٹی شوٹ آؤٹ پر ہواجس پر ایران کو 3-4سے شکست ہوئی لیکن وہ 8گولز کے ساتھ ٹاپ اسکورر رہےاور ایشین فٹبالر آف دی ائیر قرار پائے۔ انہوں نے 1996 ءمیں 18 انٹرنیشنل میچز میں 22گول کئے۔

سال 2000 ءعلی داعی کیلئے ایک اور بہترین سال ثابت ہوااورنے 19 میچز میں 20گول کرنے کا کارنامہ انجام دیا، انہوں نے 28نومبر 2003ء ایشین کپ کوالیفائرمیں لبنان کیخلاف میچ میں اپنے کیرئیرکا 100واں میچ کھیلتے ہوئے ہنگری کے فرینک پکاس کار یکارڈ توڑڈالا۔

علی داعی نے اپنے کیرئیر کا 85 گول کرنے کا اعزاز حاصل کیاجبکہ پکاس نے 47برس قبل سب سے زیادہ 84 گول کئے تھے۔

انہوں نے 2004 ورلڈ کپ کوالیفائر میں ایران کو لاؤس کے خلاف 7-0 سے فتح دلائی اور انٹر نیشنل کیرئیر میں 100 گول مکمل کر کے تاریخ رقم کی ۔

جب انہیں 2006ء فیفا ورلڈ کپ کیلئے ایرانی ٹیم میں شامل کیا گیاتو ایرانی میڈیا نے ان کے زائد عمر کی وجہ سے ریٹائرمنٹ کا مطالبہ کیا لیکن انہوں نے میڈیا کے مطالبات کو رد کیا اور شدید تنقید کے باوجود 2006ء فیفا ورلڈ کپ میں شرکت کی۔

علی داعی کو ان کے پلئینگ کیرئیر میں ہی2001یونیسف گڈ ول ایمبسڈر مقرر کیا گیااور2007 ءتا2013ء تک فیفا فٹبال کمیٹی کےرکن رہے، ان کی لیگ فٹبال کیریئر میں بھی کارکردگی شاندار رہی۔

انہوں نے ایرانی پریمیئر لیگ استقلال ادرابیل، تاکسیرانی، بینک تجارت ایف سی اور پرسپولیس ایف سی کلبز کی نمائندگی کی اور 1996 - 97 میں قطری فٹبال کلب،السعد کی جانب سے کھیلنا شروع کیا۔

علی داعی نے مڈل ایسٹ میں تہلکہ مچانے کے بعد اس زمانے میںیورپین کلبز میں قسمت آزمائی کی، جب مڈل ایسٹ اور ایشین پلیئر یورپین کلبز سے معاہدے کرنے سے گھبراتے تھے ، انہوں نے جرمنی کی لیگ کلب بائرن میونخ میں بھی دھوم مچائی ، 1997-98سیزن میں جرمن بنڈس لیگا2 میں ارمینیا بیل فیلڈکی جانب سے 25میچز میں 7گولز کئے۔

1998-99میں بائرن میونخ سے وابستہ ہوئےاوراس سیزن میں بائرن میونخ نے 15ویں بار جرمن بندس لیگا چیمپئن بننے اعزاز حاصل کیا۔ وہ لیگ میں سب زیادہ اسکورر کرنے والوں کی فہرست میں دوسرے نمبر پر تھے۔ 1999-2000ہرتھا بی ایس سی اور 2002 سے 2007 تک مڈل ایسٹ کے فٹبال کلبز کی نمائندگی کرتے رہے۔

انہوں نے مئی 2007 میںایرانی کلب سیاپا کلب کو پرشین گلف کپ جیتوانے کے بعد فٹبال سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کیا، اپنے 20سالہ کیرئیر میں مجموعی طور پر 287میچز میں 112گولز کئے۔

علی داعی نے ریٹائرمنٹ کے بعد 2008 -تا 2009 تک ایران فٹبال ٹیم میں کوچنگ کے فرائض انجام دیئے ۔وہ ایرانی لیگ کلبز سیاپا، پرسپولیس،راہ آھن، صباقم اور نفت تہران کی بھی کوچنگ کرچکے ہیں۔

51سالہ علی داعی 2009 سےکھیلوں کا سامان بنانے کی کمپنی ’’دائی اسپورٹس‘‘چلارہے ہیں ۔ یہ کمپنی ایران کے پریمیر فٹ بال لیگ ٹیموں کے لئے فٹ بال کٹس مہیا کرتی ہے۔

ایرانی ہیرونے 35 سال کی عمر میں گول کی سنچری مکمل کرنے کا اعزاز حاصل کیا تھا اورعالمی شہرت یافتہ فٹبالر کرسٹیانو رونالڈوبھی 35 برس کی عمر میں یہ کارنامہ انجام دیا ہے۔ اب رونالڈو کو علی داعی کا109گول کا ریکارڈ توڑنے کیلئے مزید 9 گول کی ضرورت ہے۔

اس ضمن میں رونالڈو کے نئے حریف علی داعی کا کہناہے کہ ’’ریکارڈ توڑنے کیلئے ہی بنائے جاتے ہیں۔ جب مجھےیہ موقع ملاتھا تو میں نے یہ سب کیا اب کسی اور پلیئر کی باری ہے کہ وہ نئی تاریخ رقم کرے ۔‘‘

خیال رہے کہ پرتگالی کھلاڑی نےگزشتہ برس یورو کپ کوالیفائرز میں یوکرین کیخلاف میچ میں دو گول کرکے 700 گول کرنے والے دنیا کے چھٹے فٹبالر بننے کا اعزاز حاصل کیا ہے۔

کھیلوں کی خبریں سے مزید