آپ آف لائن ہیں
منگل9؍ربیع الاوّل 1442ھ 27؍اکتوبر 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

بااختیار شہری حکومت کیلئے موجودہ بلدیاتی ایکٹ منسوخ کیا جائے، حافظ نعیم

کراچی (اسٹاف رپورٹر )امیرجماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کہا ہے کہ کراچی میں بااختیار شہری حکومت ہی تمام مسائل کا حل ہے اس کے لیے سندھ حکومت کا موجودہ بلدیاتی ایکٹ منسوخ کیا جائے، کوٹہ سسٹم ختم کرکے کراچی کے شہریوں کو میرٹ کی بنیاد پر ملازمتیں دی جائیں۔ جماعت اسلامی کی جانب سے پیش کیے گئے ”اعلان کراچی“ کے مطالبات کے حوالے سے ہونے والے عوامی ریفرنڈم کے لیے نائب امیر جماعت اسلامی کراچی ڈاکٹر اسامہ رضی کی سربراہی میں کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے، 14اکتوبر کو پورے ملک میں ”یوم یکجہتی حقوق کراچی“بھر پور طریقے سے منایا جائے گا۔ وفاقی حکومت کے الیکٹرک کو بھاگنے کا موقع فراہم کررہی ہے لیکن ہم عوامی دباؤ کے ذریعے سے ہی کے الیکٹرک سمیت تمام مسائل حل کرائیں گے۔کراچی میں از سر نو مردم شماری کی جائے۔ان خیالات کااظہار انہوں نے ادارہ نورحق میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر ڈاکٹر اسامہ رضی،سکریٹری اطلاعات زاہد عسکری، پبلک ایڈ کمیٹی کے الیکٹرک کمپلنٹ سیل کے چیئرمین

عمران شاہد ودیگر بھی موجود تھے۔حافظ نعیم الرحمن نے مزیدکہاکہ الیکٹرک کو مزید نوازا جارہاہے،وفاقی حکومت کے الیکٹرک کے لیے فرار کی راہ ہموار کرکے نئی تازہ دم کمپنی کو لے کر آنے کی تیاری کررہی ہے، ایسی صورت میں کے الیکٹرک کے ذمہ تمام واجب الاداء رقم قومی خزانے سے ادا کی جائے گی، جماعت اسلامی کسی صورت میں کے الیکٹرک کو بھاگنے کا موقع نہیں دے گی ہم تمام چینلز کے پورٹرز کی ٹیم کیمرہ مین حضرات کے شکر گزار ہیں جنہوں نے ”حقوق کراچی مارچ“کی کوریج کی اور میڈیا ہاؤس کے ذمہ داران کے بھی شکر گزار ہیں ۔

شہر قائد/ شہر کی آواز سے مزید