آپ آف لائن ہیں
پیر 8؍ ربیع الاوّل1442ھ 26؍اکتوبر2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

خوراک کا عالمی دن آج منایا جا رہا ہے، دنیا بھر میں 80 کروڑ سے زائد افراد کو خوراک کی شدید کمی کا سامنا ہے.

اقوام متحدہ کے ادارہ برائے خوراک و زراعت کے زیر اہتمام ہر سال 16 اکتوبر کو عالمی یوم خوراک منایا جاتا ہے۔

اس سال کا عنوان ’بھوک کا خاتمہ 2030 تک ممکن ہے، رکھا گیا ہے جس کا مقصد خوراک کی پیداوار میں اضافہ اور خوراک کی قلت کے خاتمے کے لئے اقدامات کرنا ہے۔ مستقبل میں غذائی قلت جیسے مسئلے سے نمٹنے کے لئے حکمت عملی تیار کرنا ہے تا کہ آنے والی نسلوں کو غذائی قلت سے بچایا جا سکے۔

اقوام متحدہ کے مطابق اگر کھانے کو ضائع ہونے سے بچایا جائے اور کم وسائل میں زیادہ زراعت کی جائے تو 2030 تک اس ہدف کی تکمیل کی جا سکتی ہے۔

  اس وقت دنیا بھر میں 80 کروڑ سے زائد افراد دو وقت کی روٹی سے محروم ہیں جبکہ 22 ممالک شدید غذائی بحران کا شکار ہیں۔

پاکستان میں غذایت بخش خوراک کے لحاظ سے صورتحال خطرناک ہے جبکہ ملک میں 20 فیصد بڑے اورپانچ سال سے کم عمر کے 45 فیصد بچے خوراک کی کمی کاشکار ہیں۔

خاص رپورٹ سے مزید