آپ آف لائن ہیں
ہفتہ4؍رمضان المبارک 1442ھ 17؍اپریل 2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

سعودی عرب میں ملازمت کے نئے قانون کا نفاذ

سعودی عرب میں ملازمت کا نیا قانون نافذ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، نئے قانون کے بعد کفالت کا نظام ختم ہوجائے گا۔

کل (اتوار) سے نافذ ہونے والا ملازمت کا نیا قانون تین نکاتی ہے، جس کے 4 بڑے اہداف ہیں۔

عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق نئے قانون کے نفاذ سے مملکت میں کام کرنے والے تارکین وطن کو ملازمت کی تبدیلی کے اختیار سمیت مختلف سہولتیں فراہم کی جائیں گی۔

رپورٹ کے مطابق سعودی عرب میں کام کرنے والے 80 لاکھ سے زائد غیر ملکی براہ راست نئے قانون سے فائدہ اٹھا سکیں گے۔

نئے قانون میں غیر ملکی کارکن کو ایک کمپنی سے دوسری کمپنی میں ملازمت کی اجازت کے لیے شرائط رکھی گئی ہیں۔ جس کے تحت کوئی بھی غیر ملکی کارکن پہلے آجر سے دوسرے آجر کے ہاں ملازمت کا مجاز ہے تاہم ضروری ہے کہ نیا آجر ملازمت دینے کے لیے تیار ہو۔

غیر ملکی کارکن موجودہ آجر کی منظوری کے بغیر ملازمت کا مصدقہ معاہدہ ختم ہونے پر دوسرے آجر کے پاس ملازمت کا حق دار ہے۔

بین الاقوامی خبریں سے مزید