حسن علی نے ٹیم میں واپسی کے سفر کو مشکل قرار دیدیا
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

حسن علی نے ٹیم میں واپسی کے سفر کو مشکل قرار دیدیا

پاکستان کو ہرارے ٹیسٹ میں فتح سے ہمکنار کروانے والے حسن علی نے ٹیم میں واپسی کے سفر کو بہت ہی مشکل قرار دے دیا۔

زمبابوے کے خلاف ہرارے ٹیسٹ میں مجموعی طور پر 89 رنز کے عوض 9 وکٹیں اپنے نام کرنے والے حسن علی نے ٹیم کی جیت پر بہت خوش ہیں۔

حسن علی جو میچ کے مردِ میدان قرار پائے ہیں، نے کہا کہ میری واپسی کا سفر بہت مشکل تھا، 2 سال کرکٹ سے باہر رہا تھا۔


اُن کا کہنا تھا کہ میں نے اپنی فٹنس پر بہت کام کیا تھا، فرسٹ کلاس کرکٹ میں لمبی کرکٹ کھیلنے کا کافی تجربہ ہوا ہے، پہلی بار بیک ٹو بیک اتنے فرسٹ کلاس میچز کھیلا تھا۔

حسن علی نے مزید کہا کہ جب باہر تھا تو ایک وقت تھا جب میں کافی پریشان تھا، رویا بھی تھا لیکن اپنی محنت کے سلسلے کو کبھی نہیں چھوڑا تھا۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ یہ سوچا تھا کہ کم بیک کروں اور ایسا کروں کہ دنیا دیکھے، میری سیلبریشن کا میری انجری سے کوئی تعلق نہیں۔

ٹیسٹ میچ کے مرد میدان کا کہنا تھا کہ لمبی کرکٹ کھیلنی ہے تو فرسٹ کلاس کرکٹ ضرور کھیلیں، فرسٹ کلاس کرکٹ کھیل کر بہت مدد ملتی ہے۔

اُن کا کہنا تھا کہ اگر ٹیسٹ کرکٹ کھیلنا چاہتے ہیں تو فرسٹ کلاس کرکٹ کھیلنا ہی کھیلنا ہے، میں ہمیشہ سے ٹیسٹ کرکٹ کھیلنا چاہتا تھا۔

حسن علی نے ہرارے میں کھیلے گئے اس ٹیسٹ میچ کی دونوں اننگز میں مجموعی طور پر 89 رنز دے کر 9 وکٹیں اپنے نام کیں۔

کھیلوں کی خبریں سے مزید