• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

حافظ حمدﷲ کا شناختی کارڈ بلاک، شہریت منسوخی کا حکم غیرقانونی قرار، شہریت بنیادی حق، نادرا کے پاس ختم کرنے کا اختیار نہیں، اسلام آباد ہائیکورٹ

اسلام آباد(نیوز ایجنسیاں ) اسلام آ باد ہائیکورٹ نے نادرا کی جانب سے جے یو آئی (ف)کے رہنما اور سابق سینیٹر حافظ حمد اللہ کا شناختی کارڈ بلاک کرنے اور شہریت منسوخی کا حکم غیر قانونی قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ شہریت سب سے بڑا بنیادی حق ہے ، نادرا کے پاس اسے ختم کرنے کا اختیار نہیں۔جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیئے کہ ایک رپورٹ پر ایک شخص کی شہریت ختم کر دیتے ہیں ایسا تو نہیں ہونا چاہیے، ملک میں آئین ہے قانون ہے، آپ کو پتا ہے ایک دن کیلئے بھی شناختی کارڈ بلاک کریں تو اثرات کیا ہو سکتے ہیں، آپ ایک شخص کی شہریت ہی ختم کر دیتے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ جسٹس اطہر من اللہ نے حافظ حمداللہ کا شناختی کارڈ بلاک کئے جانے اور انکی شہریت منسوخی سے متعلق نادرا کے حکم کیخلاف محفوظ فیصلہ سنادیا۔ عدالت نے سینیٹر حمداللہ کا شناختی کارڈ بلاک کرنے اور شہریت منسوخی کا نادرا کا حکم غیر قانونی اور اس سے متعلق احکامات کو اختیارات سے متجاوز قرار دیدیا۔ اسکے علاوہ پیمرا کا حافظ حمد اللہ کو ٹی وی پر دکھانے کی پابندی کا حکم بھی کالعدم کردیا گیا۔ عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا کہ شہریت سب سے بڑا بنیادی حق ہے نادرا کے پاس اسے ختم کرنے کا اختیار نہیں۔

اہم خبریں سے مزید