• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

رواں سال کے پہلے سورج گرہن کا آغاز ہوگیا لیکن پاکستان میں سورج گرہن کا نظارہ نہیں کیا جاسکےگا جبکہ سورج گرہن پاکستانی وقت کے مطابق 3 بجکر 42 منٹ پر اپنے عروج پر پہنچے گا۔

ڈائریکٹر انسٹیٹیوٹ آف اسپیس سائنس اینڈ ٹیکنالوجی،جامعہ کراچی پروفیسر ڈاکٹر جاوید اقبال کے مطابق سورج گرہن پاکستان میں نظر نہیں آئے گا۔

پروفیسر ڈاکٹر جاوید اقبال نے کہا کہ سورج گرہن کا نظارہ روس، گرین لینڈ، شمالی کینڈا، شمالی ایشیا، یورپ، امریکا اور دیگر ممالک میں دیکھا گیا۔

اُنہوں نے کہا کہ سورج گرہن کے دوران چاند زمین اور سورج کے درمیان سے گزرے گا جبکہ سورج گرہن کے دوران چاند زمین سے دور ہونے کے باعث سورج کو مکمل ڈھانپ نہیں پائے گا۔

پروفیسر ڈاکٹر جاوید اقبال نے یہ بھی کہا کہ سورج گرہن کے دوران رنگ آف فائر بھی دیکھا جائے گا۔

ڈائریکٹر انسٹیٹیوٹ آف اسپیس سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کا مزید کہنا تھا کہ 4 بجکر 34 منٹ پر سورج گرہن ختم ہوجائے گا۔

خاص رپورٹ سے مزید