• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

سپریم کورٹ آف پاکستان نے کراچی میں شاہراہِ فیصل پر قائم نسلہ ٹاور کو غیر قانونی طور پر زمین و آلات ہونے اور لیز نہ ہونے سمیت دیگر الزامات ثابت ہونے پر گرانے کا حکم دے دیا ہے۔

چیف جسٹس پاکستان گلزار احمد نے کیس کی سماعت کرتے ہوئے کراچی کے نسلہ ٹاور کو گرانے کا حکم دیا اور کہا کہ کمشنر کراچی نے یہ کام کرنا ہے۔

سپریم کورٹ آف پاکستان نے سندھ میں تمام سرکاری زمین سے تجاوزات ختم کرانے کا حکم بھی دیا اور کہا کہ کراچی اور سندھ کا بیڑہ غرق کر دیا گیا ہے۔

چیف جسٹس گلزار احمد کا یہ بھی کہنا تھا کہ ریونیو کا ادارہ سب سے کرپٹ ہے، جو اربوں روپے بنا رہا ہے۔

قومی خبریں سے مزید