• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

کورونا وَبائی مرض نے ہماری عادتوں کو تبدیل اور ہماری سرگرمیوں کو محدود کرکے رکھ دیا ہے۔ دنیا بھر میں اربوں افراد کووِڈ-19پر قابو پانے کے لیے لگائی جانے والی بندشوں کے باعث اپنے گھروں میں قید ہوکر رہے گئے ہیں۔ اس کے کچھ اثرات گھر سے باہر کھانا کھانے، سفرکرنے، جم جانے یا مووی دیکھنے کے لیے سنیما جانے پر پابندی کی صورت میں دیکھے گئے ہیں۔ دفاتر اور کاروبار بند ہونے کے باعث کچھ لوگوں نے اپنے وقت اور پیسے کی بھی کچھ بچت کی۔

کووِڈ لاک ڈاؤن کا مثبت پہلو یہ ہے کہ کئی لوگوں کو اپنے خاندان کے ساتھ بہتر وقت گزارنے، نئے مشاغل اپنانے اور گھر کے وہ تمام کام جو مصروفیت کے باعث نہ ہوسکے تھے، انہیں نمٹانے کا موقع مل رہا ہے۔ ایسے میں کئی لوگوں نے گھر کی تزئینِ نو (ری- ماڈلنگ) کے منصوبے بھی شروع کیے ہوئے ہیں۔ ایک کمپنی کے گوگل سرچ تجزیے اور سروے کے مطابق، لاک ڈاؤن کے دوران ہر دس میں سے نو افراد نے گھر کی ری-ماڈلنگ کے منصوبے پر کام کیا ہے۔ ذیل میں گھر کی ری-ماڈلنگ کے حوالے سے کچھ مشورے پیشِ خدمت ہیں، جو آپ کے گھر کی قدر و قیمت بڑھانے میں مددگار ثابت ہوسکتے ہیں۔

گھر کا بیرونی منظر

کچھ لوگ صرف گھر کے انٹیریئر پر توجہ دیتے ہیں جب کہ وہ گھر کی بیرونی حالت کو نظرانداز کردیتے ہیں۔ یاد رکھیں، پہلا تاثر انتہائی اہمیت کا حامل ہوتا ہے۔ گھر کا فرنٹ ایسا ہونا چاہیے کہ وہ گھر کی خریداری میں دلچسپی رکھنے والے ممکنہ خریدار کو للچاتے ہوئے اسے جلد از جلد گاڑی سے باہر آنے پر مجبور کردے۔ گھر کی بیرونی خراب دیواریں، ٹوٹا پھوٹا دروازہ اور نکاسی آب کی ناقص لائنیں ممکنہ خریداروں کو آپ کے گھر سے دور رکھنے کے لیے کافی ہوں گی۔ اگر گھر کا بیرونی دروازہ دیکھ کر آپ کو یہ احساس ہوتا ہے کہ یہ اپنے اچھے دن گزار چکا ہے تو اسے بدلنے میں ہی بہتری ہے۔

لینڈ اسکیپنگ

ایک خوبصورت اور صاف ستھرا صحن آپ کے گھر کی قدر و قیمت بڑھانے کی بڑی وجہ بن سکتا ہے۔ صحن میں خوبصورت باغیچہ اور پودے اسے زندگی بخشتے ہیں۔ اگر آپ باغیچہ بنانے میں ناکام ہورہے ہیں تو اس کے لیے کسی لینڈاسکیپنگ پروفیشنل کی خدمات حاصل کریں۔ اگر درخت کی شاخیں کاٹنے (ٹرم) کرنے کی ضرورت ہے تواس کے لیے بھی پروفیشنل لینڈ اسکیپر اچھی طرح کام کرسکتا ہے۔ ساتھ ہی وہ باغیچے کو ہرا بھرا رکھنے کے لیے آپ کو بہتر اور مؤثر فرٹیلائزر بھی تجویز کرے گا۔

آؤٹ ڈور ڈیک

وَبائی مرض کے باعث لوگ بڑے سماجی اجتماعات کا انتظام کرنے یا ان میں شرکت سے پرہیز کرتے ہیں، ایسے میں کئی لوگوں نے گھر کے صحن میں آؤٹ ڈور ڈیک بنوادیے ہیں، جہاں محدود لوگوں کو مدعو کرکے سماجی فاصلہ کو یقینی بنایا جاسکتا ہے۔ یقیناً وَبا کے زمانے میں آؤٹ ڈور ڈیک پر سرمایہ کاری ناصرف آپ کے گھر کی قدر و قیمت بڑھادے گی بلکہ اس طرح آپ اپنے خاندان اور قریبی دوستوں کے ساتھ اچھا وقت بھی گزار سکتے ہیں۔

دیواریں اور فرش

آپ کے گھر کی تعمیر بھلے پُرانی ہو لیکن جب فروخت کے لیے پیش کریں تو اسے صاف ستھرا اور چمکتا ہوا نظر آنا چاہیے۔ سفید یا ہلکے رنگ کا نیا رنگ آپ کے کمروں کو چمکا دے گا اور خریدار پر اچھا تاثر چھوڑے گا۔ اسی طرح، اگر آپ نے دیواروں کو وال پیپر سے سجایا ہوا ہے تو دیکھ لیں کہ وہ پرانے اور پھٹے ہوئے نہ لگیں۔ آپ کی حتی الامکان کوشش یہی ہونی چاہیے کہ خریدار کو گھر میں ایسا کوئی نقص نظر نہ آئے جو اس کی گھر میں دلچسپی کو کم کرنے کا باعث بن سکتی ہو۔ اسی طرح، اگر آپ نے گھر میں قالین بچھایا ہوا ہے اور وہ پُرانا ہوگیا ہے تو اسے بھی فوری طور پر بدل دیں۔ لکڑی کا فرش اس سے کہیں بہتر ہے۔

باورچی خانہ

باورچی خانہ میں آپ کو نئے اپلائنسز نصب کرنے اور دیگر مہنگی سرمایہ کاری کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔ اس کے علاوہ پُرانے کبڈوں کو تبدیل کرنے کے بجائے انہیں نیا پینٹ کردیا جائے یا صرف وارنش کرنے سے ہی وہ پھر سے چمک اٹھیں گے۔ ایک پُرکشش کاؤنٹر ٹاپ میں سرمایہ کاری آپ کو اچھا منافع دے سکتی ہے اور اس کے لیےمارکیٹ میں کئی خوبصورت، پائیدار اور سستے متبادل دستیاب ہیں۔

روشنی کا انتظام

ہر ممکن حد تک کوشش کریں کہ گھر کی تزئینِ نو میں کھڑکیوں، چھت اور دیواروں میں ایسے انتظامات کیے جائیں کہ ان کے ذریعے زیادہ سے زیادہ قدرتی روشنی آپ کے گھر کے اندر پہنچ رہی ہو۔ اس طرح آپ کا گھر کھلا کھلا اور کشادہ لگتا ہے۔ اگر کسی کمرے میں قدرتی روشنی کا انتظام نہ ہو تو وہاں چھت میں ڈھکی ہوئی لائٹنگ سسٹم نصب کرکے اسے روشن کیا جاسکتا ہے اور یہ روشنی آنکھوں پر بھی بوجھ نہیں بنتی۔