• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

نوید بلوچ نے کوئی جرم کیا توعدالتوں میں پیش کیا جائے،وائس فار بلوچ مسنگ پرسنز

کوئٹہ(اسٹاف رپورٹر)وائس فار بلوچ مسنگ پرسنز کے زیر اہتمام طلباء تنظیموں کی جانب سے مبینہ طور پر لاپتہ نوید بلوچ کی بازیابی کیلئے کوئٹہ پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا ، اس موقع پر مظاہرے کے شرکاء نے پلے کاررڈ اور بینر اٹھا رکھے تھے ۔ مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے مبینہ طور پر لاپتہ نوید بلوچ کے بڑے بھائی تنویر بلوچ ، بی ایس او کے زبیر بلوچ ، سید زبیر شاہ آغا ، نیشنل ڈیموکریٹک پارٹی کے رشید کریم بلوچ ، حوران بلوچ ، آغا عدنان شاہ ، حوران بلوچ ، عمر بلوچ و دیگر نے کہا کہ بلوچستان کے عوام اپنے بنیادی حقوق کیلئے روز اول سے سراپا احتجاج ہیں اور جمہوری انداز میں آواز اٹھارہے ہیں مگر کوئی شنوائی نہیں ہورہی ، انہوں نے کہا کہ 11 اکتوبر کی رات سیٹلائٹ ٹاون میں گھر پر چھاپہ مارکر سادہ کپڑوں میں ملبوس اہلکار نوید بلوچ کو مبینہ طور پر گرفتارکرکے اپنے ساتھ لے گئے۔ انہوں نے کہا کہ نوید بلوچ یونیورسٹی آف بلوچستان کا طالبعلم ہے اور ہمیں معلوم نہیں کہ وہ اس وقت کہاں اور کس حال میں ہے ، انہوں نے کہا کہ نوید بلوچ نے کوئی جرم کیا ہے تو آئین پاکستان کے تحت اسے عدالتوں میں پیش کیا جائے ۔
کوئٹہ سے مزید