| |
Home Page
پیر2 ؍ جمادی الثانی 1439ھ 19؍ فروری 2018ء
رضا علی عابدی
دوسرا رخ
February 16, 2018
چراغ سب کے بجھیں گے

ایک روز عاصمہ جہانگیر چل بسیں، اسی دن قاضی واجد بھی رخصت ہوئے۔ عاصمہ عدالتوں اور عدلیہ کی راہ داریوں میںنام پاگئی تھیں، تمام بڑے لوگوں نے ان کا سوگ منایا۔ قاضی واجد گھروںمیں اور دلوںمیںبس گئے تھے، اپنے گوشے میں سر نیوڑھا کر ہم نے بھی ان کی آنکھوں سے ٹپکتی محبت کی یاد منالی۔بعض مرنے والے بہت دکھ دیتے ہیں، اس لئے نہیں کہ وہ چلے گئے،...
February 09, 2018
لذّتِ خوابِ سحر

آج دو شخصیات کی باتیں ہیں۔ ایک وہ جن سے میں خوب واقف ہوں لیکن ان پر کوئی افتاد پڑی ہے جس کی تفصیل سے بے خبر ہوں۔ وہ ہیں اردو زبان اور ادب کے سرکردہ عالم سحر انصاری۔ اور دوسری شخصیت کراچی کی ایک لڑکی ہے جس سے میں واقف نہیں ۔ اس نے نادار ، بھوکے اور ترسے ہوئے بچّوں کے لئے فٹ پاتھوں پر مفت اسکول کھول دئیے ہیں مگر کچھ علم کے بد خواہوں نے...
February 02, 2018
خلق خدا کی بھلائی کے دشمن

کبھی کبھی عام لوگ سادگی میں اتنی بڑی بات کہہ جاتے ہیں کہ ذہن سے کبھی محو نہیں ہوتی۔ ایک بار میں کسی سے کہہ رہا تھا کہ فلاں صاحب خلق کی بھلائی کا بہت ہی بڑا کام کر رہے ہیں مگر حیرت ہے کہ دنیا کو خبر نہیں۔اس پر انہوں نے کیا کہا ، غور سے سنئے۔ بولے کہ اچھا ہی ہے دنیا کو خبر نہیں، خبر ہوئی تو کہیں سے کوئی سر پھرا کھڑا ہوجائے گا اوران کے کام...
January 26, 2018
ساقی کے بعد میخانہ اداس ہے

آج دوستوں، محسنوں اور مداحوں نے ساقی فاروقی کو بوجھل دل کے ساتھ لحد میں اتاردیا۔ کیسا طنطنہ تھا کبھی اور کیسا دبدبہ، آج آنکھیں موندے خاموشی سے تہ خاک ہوگیا۔ وہ اپنی تواناشاعری اور اتنے ہی توانا لب و لہجے کے لئے بہت بہت یاد رکھا جائے گا۔ ساقی کا شمار ان گنے چنے شاعروں میں ہوتا ہے جنہوں نے شعر گوئی کی لگی بندھی ڈگر کو چھوڑ کر اپنی...
January 19, 2018
اونچے مکان دنیا پریشان

اونچی دکان کا حال آپ نے اکثر سنا ہوگا، آج اونچے مکان کی بات ہو رہی ہے۔ ہم نے اپنی طرف کے شہروں کی جتنی بھی قدیم تصویریں دیکھی ہیں، سب میں جہاں تک نگاہ جاتی تھی، ایک منزلہ عمارتیں نظر آتی تھیں۔گزرے ہوئے دنوں کا یہی چلن تھا۔ چھت پر بس اتنا تھا کہ گرمیوں میں لوگ وہاں چارپائیاں ڈال کر سو رہتے تھے یاپتنگ اڑانے اور عید کا چاند دیکھنے...
January 12, 2018
کراچی آرٹس کونسل یا زیارت گاہ

اردو ہے جس کا نام ہم اتنا جانتے ہیں کہ عجب شے ہے۔ کتنے ہی لوگ کہتے ہیں کہ یہ ہماری نہیں مگرذرا دھیان سے دیکھیں توصاف لگتا ہے کہ ہر ایک کی ہے۔جس زمانے میں یہ راہ چلتے لوگوں میں رواج پارہی تھی تو اس کا کوئی نام نہ تھا۔ہر علاقے کی کوئی نہ کوئی بولی تھی۔ ہر بولی کے نام کے ساتھ علاقے کا نام بھی نتھی تھا۔ مگر یہ ایک ایسی زبان تھی کہ بر صغیر...
January 05, 2018
کیا ادیب ماحول کو بچائیں گے؟

کراچی کی سڑکوں کا دھواںپھا نکتا اور راتوں کو بری طرح کھانستا میں خیر سے واپس لندن پہنچ گیا۔ لندن پہنچ کر یہ اطمینان نہیں ہوا کہ اب صاف ہوا میں سانس لوں گا بلکہ یہ فکر ہوئی کہ شہر کراچی کا کیا بنے گا۔ ٹریفک کا یہ حال ہے کہ سڑکوں میں مزید موٹر گاڑیاں سمانے کی سکت نہیں رہی۔ وہ دن دور نہیں جب سیلاب کی طرح امڈ کر آنے والی گاڑیو ں کے تلے...
December 22, 2017
ان کی باتوں میں مٹھاس گُڑ کی

پچھلے دنوں رحیم یار خاں گیا تو اپنا بچپن بہت یاد آیا جب شہر سے گنّے سے لدی بیل گاڑیاں گزرتی تھیں تو لڑکے پیچھے پیچھے دوڑ کر گنّے کھینچا کرتے تھے۔ کبھی کبھی بیل گاڑی والے کا ایک مددگارپیچھے پیچھے چلا کرتا اور گنّے کھینچنے والے لڑکوں کو چھڑی سے ڈرایا کرتا تھا۔ ویسے وہ چھڑی بھی چھوٹا گنّا ہی ہوا کرتی تھی۔ مگر میں نے جو منظر رحیم یار...
December 15, 2017
بدلتاہے رنگ بہاول پورکیسے کیسے

خیر پور اور بدین کے گاؤں دیہات دیکھ کر، ملتان ہوتا ہوا میں اپنے پسندیدہ شہر بہاول پور پہنچ گیا ہوں۔میں آیا تو اچھا بھلا موسم تھا ۔ میرے آتے ہی گھٹائیں بھی آگئیں، رات کو گھن گرج بھی ہوئی اوربادل ٹوٹ کے برسے۔درجہ حرارت نے بھی تان سے تان ملائی اور اس بچّے کی طرح گرا جس نے ابھی ابھی چلنا سیکھا ہو۔سردی بڑھی تولندن سے لائے ہوئے گرم...
December 08, 2017
تبدیلی یا نظر کا دھوکا؟

میں پاکستان میں ہوں اور دیکھ رہا ہوں کہ تبدیلی آرہی ہے۔ مقام بدل رہے ہیں، جگہ بدل رہی ہے۔رویّے بدل رہے ہیں، انسانی رشتے بدل رہے ہیں اور سب سے بڑھ کر یہ کہ لوگ تبدیل ہورہے ہیں۔ ترجیحات پہلے جیسی نہیں رہیں۔پسند نا پسند کچھ کی کچھ ہو گئی ہے اور قدم پہلے جدھر اٹھتے تھے، اٹھنے بند ہوگئے ہیں۔رُخ اختیار کرنے میں لوگ پہلی جیسی احتیاط نہیں...
December 01, 2017
ہمایوں کا مقبرہ کیوں گرادیا جائے

غالب کو ایک کمال حاصل تھا۔ انیسویںصدی میں وہ بات کہہ گئے جو آج کے حالات پر یوں چسپاں ہوتی ہے جیسے آج ہی کے لئے کہی گئی تھی۔ کہتے ہیں:ہوئی جن سے توقع خستگی کی داد پانے کی وہ ہم سے بھی زیادہ کشتہء تیغ ستم نکلےابھی ہم منتظر تھے کہ بھارت کے مسلمان تاج محل کوگرادینے کے متعصبانہ نعرے کے خلاف ہماری فریاد کی لے میں لے ملائیں گے کہ ملک کے...
November 24, 2017
پورے وجود کی پیوندکاری

دنیا عجائب گھرہے۔ اس میں عجوبے آباد ہیں۔ ان کی کچھ کہانیاں ایسی ہیں کہ یقین کرنا مشکل ہے۔ ایسی ہی یہ کہانی برطانیہ کی ایک خاتون کی ہے۔دردمند دل توبہت سے سینوں میں دھڑکتے ہوں گے مگر ان خاتون کا قصہ سن کر لگتا ہے کہ ایسا پہلی بار ہورہا ہے۔ ہوا یہ ہے کہ خاتون امید سے ہیں اور ان کے ہاں ولادت ہونے ہی والی ہے۔ ماہر ڈاکٹر ان کی شروع ہی سے...
November 17, 2017
جہانگیر پارک کے نصیب جاگ اٹھے

پاکستان میں ایک اچھا کام بھی ہوا ہے۔ اجڑے،ویران پڑے اور تباہ حال جہانگیر پارک کو بنا سنوار کر ایسے نکھار دیا گیا ہے جیسے کوئی معمار اسے ابھی ابھی مکمل کر کے گیا ہے۔ کراچی کے بے حد بارونق علاقے میںجو صدر کہلاتا ہے، یہ ایک سو تیس سال سے زیادہ پرانا باغ گزرے ہوئے کتنے ہی زمانوں کا گواہ ہے۔ اس نے آتے جاتے وقت کو قریب سے دیکھا ہے۔ سنہ...
November 10, 2017
کراچی کے دامن پر داغ

یہ کیا ہوگیا کراچی والوں کو۔ پہلے تو ایسے نہ تھے۔ کچھ سیدھے سادھے لوگ لی مارکیٹ،لیاری، چاکی واڑہ ، کھارادر ، میٹھا در میں بسے ہوئے تھے۔ کچھ گجراتی بولنے والے پرُامن باشندے تھے، کچھی، میمن اور بوہرے۔ کچھ انگریزوں کا زمانہ دیکھے ہوئے لوگ تھے جو خود بھی آرام سے رہتے تھے اور دوسروں کو بھی چین سے رہنے دیتے تھے۔ اور جو پارسی تھے ان کی...