• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

بہاولپور میں 4 ماہ سے لاپتا نوجوان لڑکی کے کیس کا ڈراپ سین ہوگیا، پولیس نے لڑکی کو بازیاب کروالیا ہے۔

جیو نیوز سے گفتگو میں بازیاب لڑکی نے کہا کہ اسے کسی نے اغوا نہیں کیا، وہ اپنی مرضی سے پسند کی شادی کے لیے گھر سے گئی تھی۔

لڑکی نے کہا کہ دوست نے نکاح سے انکار کردیا تو ایک رکشا ڈرائیور نے اسے نکاح کی پیشکش کی جو اس نے قبول کرلی، اب وہ اسی کے ساتھ رہنا چاہتی ہے۔

دوسری جانب لڑکی نے عدالت میں بھی بیان ریکارڈ کرایا کہ اس نے مرضی سے شادی کی ہے ،وہ والدین کے گھر نہیں رہنا چاہتی۔

عدالت میں والد نے بھی کہا کہ انہیں شادی پر کوئی اعتراض نہیں جس پر پولیس نے عدالتی فیصلے پر لڑکی کو شوہر کے ساتھ بھیج دیا۔

قومی خبریں سے مزید