• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

شوگر مافیا کے پیدا کردہ چینی کے بدترین بحران کا ڈراپ سین

اسلام آباد (حنیف خالد) شوگر مافیا کی طرف سے پیدا کردہ چینی کی قلت اور گرانی کے سنگین بحران کا ڈراپ سین ہو گیا۔

صرف دو شوگر ملوں کے چلنے سے چینی کے ایکس ملز ریٹ 140روپے سے کم ہو کر منگل 9نومبر کو جنوبی پنجاب میں 101اور سنٹرل پنجاب میں 103روپے کلو ہو گئے کیونکہ چینی کا جن شوگر ملوں اور ذخیرہ اندوزوں نے بحران پیدا کر رکھا تھا اب وہ چینی کی تین دن میں ایکس ملز قیمتیں چالیس روپے کلو تک گرنے سے اپنے سارے غیر قانونی سٹاک اوپن مارکیٹ میں تیزی سے لا رہے ہیں۔

شوگر ڈیلرز ایسوسی ایشن کے سینئر ایگزیکٹو ممبر ماجد ملک کے مطابق گزشتہ روز سندھ کی کرن شوگر ملز اور نوڈیرو شوگر ملز کے سٹارٹ ہونے سے ابھی چینی دو دن بعد مارکیٹ میں آئیگی ،

مذکورہ دو شوگر ملوں کے چلنے کے بعد آج مٹیاری شوگر ملز اور چمبڑ شوگر ملز بھی پروڈکشن شروع کر رہی ہیں جبکہ کل خیر پور شوگر ملز کرشنگ سیزن شروع کرنے والی پانچویں شوگر ملز ہوگی۔ 

اسکے بعد آئندہ تین روز میں سندھ کی باقی 24شوگر ملیں کرشنگ سیزن شروع کر دیں گی۔

اہم خبریں سے مزید