• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

صوبۂ خیبر پختون خوا کے ضلع لوئر دیر میں خاتون کے ساتھ مبینہ زیادتی کرنے کے الزام میں گزشتہ روز گرفتار ہونے والے سینئر سول جج کو معطل کر دیا گیا ہے۔

رجسٹرار ہائی کورٹ نے خاتون سے مبینہ زیادتی کے الزام میں سینئر سول جج کو معطل کرنے کا اعلامیہ جاری کر دیا۔

پشاور ہائی کورٹ کے رجسٹرار کا حکم میں کہنا ہے کہ قانون سب کے لیے برابر ہے، عدالت قانون کی بالادستی پر یقین رکھتی ہے۔

واضح رہے کہ لوئر دیر میں خاتون کے ساتھ زیادتی کے الزام میں سینئر سول جج کو گزشتہ روز گرفتار کیا گیا تھا۔

لوئر دیر کے ڈی پی او کے مطابق متاثرہ خاتون کے طبی معائنے کے بعد جج کے خلاف مقدمہ درج کر کے انہیں گرفتار کیا گیا۔

متاثرہ خاتون چترال کی رہائشی اور پشاور میں بی ڈی ایس کی طالبہ ہے جس نے یہ الزام بھی عائد کیا تھا کہ جج نے 15 لاکھ روپے کی رشوت لے کر بہن کو نوکری دینے کا وعدہ کیا تھا۔

قومی خبریں سے مزید