• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

میٹرو اسٹیشن سے بچی کی لاش ملنے کے کیس میں مزيد حقائق سامنے آگئے


وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے میٹرو اسٹیشن سے بچی کی لاش ملنے کے کیس میں مزيد حقائق سامنے آگئے، قتل سے پہلے باپ، بیٹی نے آن لائن بائیک سروس استعمال کی۔

بیٹی کو قتل کرنے کے بعد باپ گولڑہ دربار چلا گیا، ملزم نے بچی کے کپڑوں کا بیگ تالاب میں پھینک دیا تھا جسے برآمد کرلیا گیا۔

پولیس نے ملزم کی 6 اور7 نومبر کی سیف سٹی فوٹیج بھی حاصل کرلی۔

آن لائن بائيک سروس کے  رائیڈر کو بھی شاملِ تفتیش  کرلیا گیا۔

رائیڈر نے پولیس کو بتایا کہ باپ بیٹی کو ڈانٹ رہا تھا کہ تم ٹھیک نہیں ہو، بہت تنگ کیا ہوا ہے۔

واضح رہے کہ پولیس کو رواں ماہ اسلام آباد کے میٹرو اسٹیشن جی11 کے واش روم سے بچی کی لاش ملی تھی، جس کے بعد پولیس نے تفتیش کی تو قتل میں بچی کا باپ ملوث نکلا تھا، جسے پولیس نے گرفتار کرلیا تھا۔

قومی خبریں سے مزید