• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

این اے 133 میں ووٹوں کی خرید و فروخت، تحقیقاتی اداروں نے مزید مہلت مانگ لی


این اے 133 کے ضمنی انتخابات میں ووٹوں کی خرید و فروخت سے متعلق مبینہ ویڈیو کا فرانزک کرانے اور ذمہ داروں کو گرفتار کرنے کی مدت ختم ہو جانے کے بعد تحقیقاتی اداروں نے مزید مہلت مانگ لی، کمیشن کا کہنا ہے کہ اگر ذمہ دار کامیاب امیدوار ہی ٹھہرا تو اسے نااہل کر دیں گے۔

لاہور سے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 133 میں ضمنی انتخابات کی سرگرمیوں کے دوران ووٹوں کی خرید و فروخت سے متعلق مختلف ویڈیوز سامنے آئیں جن پر الیکشن کمیشن نے فرانزک رپورٹ کے حصول اور ذمہ داروں کو گرفتار کرنے کے لئے مختلف اداروں کو خطوط لکھے اور انہیں 30 نومبر تک اپنی رپورٹ جمع کرانے کا حکم دیا۔

الیکشن کمیشن کے مطابق چیئرمین پیمراِ، چیئرمین نادرا سمیت آئی جی، کمشنر اور ڈپٹی کمشنر میں سے کسی نے بھی رپورٹ جمع نہیں کرائی۔

تحقیقاتی اداروں کی مزید مہلت مانگنے کی درخواست پر الیکشن کمیشن نے انہیں حکم دیا ہے کہ وہ جلد از جلد اپنی تحقیقاتی رپورٹ مکمل کرکے جگہ اور ذمہ داروں کا تعین کرکے انہیں گرفتار کریں ۔

قومی خبریں سے مزید