• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

توشہ خانہ کے بعد اب ہیلی کاپٹر اسکینڈل سامنے آیا ہے، شیری رحمٰن

فائل فوٹو
فائل فوٹو

وفاقی وزیر اور پیپلز پارٹی کی نائب صدر شیری رحمٰن کا کہنا ہے کہ آہستہ آہستہ تحریک انصاف کا ’’صاف چلی شفاف چلی‘‘ بیانیہ بے نقاب ہو رہا ہے، توشہ خانہ کے بعد اب ہیلی کاپٹر اسکینڈل سامنے آیا ہے، کفایت شعاری کا نعرہ لگا کر قومی خزانے کو بے دردی سے لوٹا گیا۔

شیری رحمٰن نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ ایک دن امریکی وفد نے عمران خان سے ملاقات کی، دوسرے دن سابق وزیر نے کہا کہ اسٹبلشمنٹ سے خراب تعلقات کی وجہ سے حکومت سے باہرہیں۔

پی پی رہنما کاکہنا تھا کہ ان دو واقعات نے جھوٹ پر مبنی ’’بیرونی سازش‘‘ کے بیانیہ کو دفن کر دیا ہے، کیا عمران خان اب امریکی انتظامیہ کو غلطی درست کرنے کی دھمکیاں دے رہے ہیں؟

انہوں نے کہا کہ بنی گالا سے ایوان وزیراعظم کے ہوائی سفر پر عمران خان نے عوام کے 98 کروڑ روپے خرچ کئے، اقتدار کے نشے میں یہ لوگ کہتے تھے ہیلی کاپٹر کا خرچ 50 سے 55 روپے فی کلومیٹر ہے۔

شیری رحمٰن نے بتایا کہ عمران خان کا یومیہ ہیلی کاپٹر کا خرچہ 8 لاکھ روپے سے زائد تھا، سادگی، کفایت شعاری کی تبلیغ کرنے والا شخص بنی گالا اور وزیراعظم ہاوس ہیلی کاپٹر پر آتا جاتا رہا۔

ان کا کہنا تھا کہ کنٹینر پر کھڑے ہو کر عمران خان مغربی ممالک کے رہنماؤں کی سائیکل پر آفس جانے کی مثالیں دیتے تھے، عمران خان کے ووٹر پونے تین سال انتظار کرتے رہے کہ ان کا لیڈر بھی سائیکل پر بنی گالا سے وزیراعظم ہاؤس جائے گا، جبکہ عوام کے ٹیکس کے پیسوں کو ہیلی کاپٹر کے سفر میں اڑایا گیا۔


قومی خبریں سے مزید