• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
فوٹو بشکریہ ٹوئٹر
فوٹو بشکریہ ٹوئٹر

یوکرین نے روس کی قید سے رہا ہونے والے اپنے ایک فوجی کی تصویر جاری کی ہے جو اب اسپتال میں تشویشناک حالت میں زیرِ علاج ہے۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق یوکرین کی وزارت دفاع نے اپنے فوجی کی تصویر شیئر کی جسے دیکھ کر انٹرنیٹ پر صارفین دکھ کا اظہار کر رہے ہیں۔

رپورٹس کے مطابق جس فوجی کی تصویر جاری کی گئی اسے رواں سال یوکرین کے شہر ماریوپول میں پکڑا گیا تھا۔


تصویر میں دیکھا جاسکتا ہے کہ یوکرین کے فوجی کے ہاتھ اور چہرے پر زخموں کے نشانات ہیں۔

اپنے بھائی پر ہونے والے تشدد سے متعلق فوجی کی بہن نے بتایا کہ ان کے بھائی کے ایک ہاتھ میں 4 سینٹی میٹر کی ہڈی موجود نہیں۔ بھائی پر قید کے دوران بہیمانہ تشدد کیا گیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ڈاکٹرز نے بتایا کہ ان کے بھائی کا اس وقت آپریشن نہیں کیا جاسکتا کیونکہ ان کا وزن انتہائی کم ہے، ایسا کرنے کی صورت میں ان کی جان کو خطرہ لاحق ہوسکتا ہے۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق فوجی کی بہن کو مطلع کردیا گیا ہے کہ ان کا بھائی یوکرین کے دارالحکومت کے ملٹری اسپتال میں زیر علاج ہے جہاں اس کی حالت تشویشناک ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق حال ہی میں جنگ کے دوران پکڑے جانے والے 205 یوکرینی افراد کو رہا کیاگیا تھا جن میں یہ فوجی بھی شامل تھا۔

بین الاقوامی خبریں سے مزید