آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل10؍ربیع الثانی 1440ھ18؍دسمبر 2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

منی لانڈرنگ اسکینڈل میں ضمانت پر رہا سابق صدرآصف زرداری اور ان کی بہن فریال تالپر انور مجید اور دیگر ملزمان کراچی بینکنگ کورٹ میں پیش ہوگئے ۔

عدالت نے 5 مفرور ملزمان کے ایک مرتبہ پھر ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے سماعت 16 اکتوبر تک کے لیے ملتوی کردی۔

منی لانڈرنگ کیس کی سماعت کے دوران آصف زرداری اور فریال تالپور بینکنگ کورٹ کراچی میں پیش ہوئے۔دوران سماعت اومنی گروپ کے سربراہ انور مجید کی اکاونٹ منجمد کرنے کے خلاف درخواست پر کارروائی شروع ہوئی تو ایف آئی اے پراسیکیوٹر نے مخالفت کی۔

پراسیکیوٹر نے کہا کہ سپریم کورٹ نے اومنی گروپ کے اکاؤنٹس سے متعلق کسی بھی قسم کا فیصلہ دینے سے روکا ہے جس پر انور مجید کے وکیل نے کہا کہ سپریم کورٹ نے آرڈر جاری کرنے سے منع کیا ہے دلائل دینے سے نہیں۔

اس موقع پر بینکنگ کورٹ کے جج نے کہا کہ پہلے سپریم کورٹ کا حکم نامہ پڑھ لیں اس کے بعد فیصلہ کریں گے۔

انور مجید کے وکیل نے استدعا کی کہ ایف آئی اے کو حتمی چالان پیش کرنے کا کہا جائے جس پر عدالت نے کہا کہ یہ معاملہ اب سپریم کورٹ کے پاس ہے اس لیے ہم ایف آئی اے کو چالان کے لیے ٹائم فریم کا کہہ سکتے ہیں۔

عدالت نے 5 مفرور ملزمان کے ایک مرتبہ پھر ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کردیے۔۔مفرور ملزمان میں حسین لوتھا، عارف خان، اعظم وزیر خان سمیت دیگر شامل ہیں۔۔

عدالت نے آصف علی زرداری،فریال تالپور اور انور مجید کے تین بیٹوں سمیت دیگر ملزمان کی عبوری ضمانت میں توسیع کرتے ہوئے سماعت 16 اکتوبر تک کے لیے ملتوی کردی۔

سماعت کے بعد سابق صدر آصف علی زرداری نے میدیا سے گفتگو کرتے ہوئے پاک بھارت تعلقات سے متعلق کہا کہ اس طرح کے ماحول میں یا اس طرح کی حکومتوں میں تو یہی ہوگا۔

بینکنگ کورٹ آمد کے موقع پرسابق صدر نے منی بجٹ کو ڈرامہ بھی قرار دیا۔


Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں