آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
بدھ 15؍ربیع الاوّل 1441ھ 13؍نومبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

وزراء خالی ہاتھ نہیں استعفیٰ ساتھ لیکر آئیں، رویہ مصالحانہ نہیں، فضل الرحمٰن

دھاندلی سے آنے والوں کو حکومت نہیں کرنے دینگے، مولانا فضل الرحمٰن


اسلام آباد(نیوز ایجنسیاں) جمعیت علمائے اسلام (ف) کے امیر مولانا فضل الرحمٰن کا کہنا ہے کہ دھاندلی سے آنے والوں کو حکومت نہیں کرنے دینگے،حکومتی وزراءکا لب و لہجہ مفاہمت کی طرف نہیں تصادم کی طرف جا رہا ہے،ان کا رویہ مصالحانہ نہیں، وزراء مذاکرات کیلئے خالی ہاتھ نہیں وزیراعظم کا استعفیٰ ساتھ لے کر آئیں، مذاکراتی ٹیم میں ہمارے موقف کو سمجھنے کی صلاحیت ہے نہ وہ ہماری بات وزیراعظم تک پہنچاتے ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے آزادی مارچ کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ مولانا فضل الرحمٰن کا کہنا تھا کہ پاکستان کی تمام سیاسی جماعتیں ایک پلیٹ فارم پر متحد ہیں، تمام سیاسی جماعتیوں کے رہنما ہر روز اپنا موقف کنٹینرز پر دیتے رہتے ہیں۔ آج اسمبلی میں جس طرح کی تقریریں کی گئیں لگتا نہیں کہ یہ مفاہمت چاہتے ہیں،وزراءکا لبن و لہجہ مفاہمت کی طرف نہیں تصادم کی طرف جا رہا ہے ۔مولانا فضل الرحمن کا مزید کہنا تھا کہ جعلی اسمبلی کی قرار دادوں کی قانون میں کوئی حیثیت نہیں ہو گی۔ جعلی اسمبلی کی قانون سازی جعلی ہوتی ہے۔ ایڈ ہاک ازم سے ملک نہیں چلتے، ایسے لوگوں کو ملک سے نکالنا ہو گا، ہم ملک کو امن کا گہوارہ بنائیں گے۔امیر جمعیت علمائے اسلام (ف) کا کہنا تھا کہ حکومتی مذاکراتی کمیٹی آتی جاتی رہتی ہے، حکومتی کمیٹی کو کہا ہے کہ ہمارے پاس آنا ہے وزیراعظم عمران خان کا استعفی لیکر آنا۔ کمیٹی میں ہمارے موقف سمجھنے کی صلاحیت نہیں۔آزادی مارچ کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ پاک فوج نے ملک میں امن کیلئے بہت زیادہ قربانیاں دیں۔مولانا فضل الرحمن کا کہنا تھا کہ دھاندلی سے آنے والوں کو حکومت نہیں کرنے دیں گے، ان کی پوری سیاست مخالفین کو چور کہنے پر قائم ہے۔

اہم خبریں سے مزید