آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
اتوار17؍ ربیع الثانی 1441ھ 15؍ دسمبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

PIA کے مزید دو لوڈرز سامان چوری کے الزام میں گرفتار

کراچی سے بذریعہ ہوائی جہاز ملتان جانے والی خاتون مسافر کے بک کرائے گئے سامان سے لاکھوں روپے مالیت کے زیورات چوری کرنے والے پی آئی اے کے دو لوڈرز کو ائیرپورٹ پولیس نے گرفتار کرکے 4 لاکھ روپے برآمد کرلیے ہیں۔

ایس ایس پی ملیر علی رضا کے مطابق خاتون مسافر کے شوہر مدثر احمد کی مدعیت میں ایف آئی آر نمبر19/141 درج کرلی گئی ہے۔ مدعی مدثر کے مطابق ان کی اہلیہ 26 مئی کو کراچی سے پی آئی اے کی پرواز پی کے 580 سے ملتان گئی تھیں۔

مدعی کے مطابق منزل پر پہنچنے پر معلوم ہوا کہ ان کے بک کرائے گئے بیگس کے تالے ٹوٹے ہوئے تھے اور اس میں سے لگ بھگ ساڑھے چار لاکھ روپے مالیت کا سونا اور زیورات غائب تھے۔

یہ بھی پڑھیے: PIA ملازمین جیل منتقل، سونے کا خریدار کیوں رہا ہوا؟

مدثر احمد کے مطابق انہوں نے کراچی اور ملتان ایئرپورٹ پر اس چوری کی شکایت درج کرا دی تھی۔ کراچی میں ائیرپورٹ سیکورٹی فورس اور پی آئی اے کی انتظامیہ کو بھی شکایت درج کرائی مگر ان کی شنوائی نہیں ہوئی۔ مدثر کے مطابق گزشتہ دنوں پی آئی اے کے 5 لوڈرز کو اسی طرح کی چوری کے الزام میں گرفتار کیا گیا تو انہوں نے کراچی ائیر پورٹ پولیس سے رابطہ کیا۔

ایس ایچ او ایئرپورٹ انسپکٹر کلیم موسیٰ کے مطابق مدثر کی مدعیت میں 12 نومبر کو اسٹوری کا مقدمہ درج کرلیا گیا جس پر تفتیش اور پی آئی اے انتظامیہ کی مدد سے دو مرکزی ملزمان کا سراغ لگایا اور انہیں گرفتار کیا۔

انسپیکٹر کلیم موسیٰ کے مطابق گرفتار ملزمان شعیب خان قومی ایئرلائن میں لوڈر اور سمیع اللّہ سیکورٹی گارڈ ہے۔ پولیس کے مطابق دونوں کو گرفتار کیا گیا ہے جنہوں نے اقرار جرم کرتے ہوئے سونا فروخت کرنے کا انکشاف کیا۔

پولیس کے مطابق ملزمان کے قبضے سے بیچے گئے سونے کی رقم 4 لاکھ روپے برآمد کرلی گئی ہے اور ان سے مزید تفتیش کی جارہی ہے۔

یہ بھی پڑھیے: مسافروں کاسامان چوری کرنیوالے PIA کے5 ملازمین گرفتار

واضح رہے کہ گزشتہ ہفتے بھی اسی نوعیت کی چوری کی ایک واردات میں قومی ایئرلائن کے 5 لوٹرز کو گرفتار کیا گیا تھا جو چند روز قبل ہی مقدمے سے ضمانت پر رہا ہونے میں کامیاب ہوچکے ہیں۔

پولیس ذرائع کے مطابق ان ملزمان کی رہائی میں مقدمے کے مدعی کی کیس میں عدم دلچسپی اور ملزمان سے مبینہ طور پر صلح کرنے کی بنا پر عمل میں آئی ہے۔

قومی خبریں سے مزید