آپ آف لائن ہیں
اتوار18؍ذی الحج 1441ھ 9؍اگست 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

شاہد خاقان نے کورونا سے متعلق اپنے تجربے سے آگاہ کردیا


سینئر رہنما ن لیگ شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ کورونا کی و جہ سے بے پناہ کمزوری ہوئی، ابھی بھی کمزوری ہے۔

جیو پاکستان میں گفتگو کرتے ہوئے ن لیگ کے سینئر رہنما شاہد خاقان عباسی نے کورونا سے متعلق اپنے تجربے سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ مجھے کورونا ہوا تو کم درجے کا بخار رہا، کورونا سے اتنی کمزوری ہوئی کہ آدھا کلو میٹر واک بھی نہیں کرسکتا تھا۔

شاہد خاقان نے بتایا کہ کورونا سے قبل دس سے 12 کلو میٹر تک روز واک کرتا تھا، قرنطینہ سے پہلے آٹھ ماہ جیل میں گزارے اس لیے آئیسولیشن کا احساس نہیں ہوا۔

یہ بھی پڑھیے: شاہد خاقان عباسی کورونا کا شکار ہوگئے

انہوں نے کہا کہ حکومت ناکام ہوچکی ہے، کوئی مستقبل نظر نہیں آتا، میں تو چاہتا ہوں کہ حکومت پانچ سال مکمل کرے۔ اس حکومت کا ہر لمحہ ملک پر بھاری ہے، عدم اعتماد تحریک واحد راستہ ہے۔

شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ مائنس ون فارمولا میری نظر میں نا ممکن ہے، میں نہیں سمجھتا کہ تحریک انصاف میں کوئی شخص عمران خان کی جگہ لے سکتا ہے، جتنی میڈیا سنسر شپ اس حکومت کے دور میں ہے کسی اوردور میں نہیں رہی۔

اپنی گفتگو میں انہوں نے کہا کہ اپوزیشن نےمیڈیا کے لیے اسمبلی کے اندر اور باہر آواز اُٹھائی ہے، موجودہ حکومت چینل بند کرواتی ہے ، لوگوں کو نوکریوں سے نکلواتی ہے، حکومت صحافیوں کا پر امن احتجاج برداشت نہیں کرسکتی تو اور کیا کرسکتی ہے۔

شاہد خاقان نے مزید کہا کہ عمران خان کو مشورہ دوں گا کہ گورننس کی بہتری کے لیے اپنا منہ بند رکھیں، وزیر اعظم کو سوچ سمجھ کر بات کرنی چاہیے، وزیر اعظم منہ بند رکھیں تو حالات پچاس فیصد بہتر ہوسکتے ہیں۔

قومی خبریں سے مزید