آپ آف لائن ہیں
بدھ21؍ذی الحج1441ھ12؍اگست 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

شوبز ستاروں کا عمران خان سے PUBG سے پابندی ہٹانے کا مطالبہ

پاکستان شوبز انڈسٹری کے نامور فنکاروں نے وزیر اعظم عمران خان سے مطالبہ کیا ہے کہ آن لائن گیم پب جی پر عائد کی گئی پابندی کو جلد از جلد ہٹایا جائے۔

مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر پر نامور اداکار فیروز خان نے اپنے ٹوئٹ میں وزیراعظم عمران خان کو مخاطب کرتے ہوئے لکھا کہ ’مجھےواقعی سمجھ نہیں آرہا کہ حکومت کو پب جی گیم پر پابندی لگانے کے مشورے کون دے رہا ہے۔‘

فیروز خان نے لکھا کہ ’ہمارے ملک میں آوارہ کتوں کو ہلا ک کیا جارہا ہے، بلیوں کو زیادتی کا نشانہ بنایا جارہا ہے لیکن پابندی آن لائن گیم پب جی پر لگائی جارہی ہے۔‘

اُنہوں نے لکھا کہ ’مجھے لگتا تھا کہ عمران خان کی حکومت سب کی زندگی کی حفاظت کے لیے جوابدہ ہوگی لیکن افسوس یہاں تو سب کچھ میری سوچ کے مترادف ہے۔‘

معروف اداکارہ ہانیہ عامر نے بھی آن لائن گیم پب جی پر لگائی جانے والی پابندی پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے اپنے ٹوئٹ میں لکھا کہ ’گیمنگ کوئی جرم نہیں ہے اور اس پر پابندی لگانے سےحکومت کو نفرت اور ناراضگی کے علاوہ کچھ حاصل نہیں ہوگا۔‘

ہانیہ عامر نے لکھا کہ ’پب جی پر پابندی لگانے کے بجائے ان مسائل کی نشاندہی کریں اور ان کا مقابلہ کریں جو تشویش اور بُرائی کا سبب ہیں۔‘

اداکارہ نے اپنے ٹوئٹ میں ہیش ٹیگ ’عمران خان پب جی کھولو‘ بھی استعمال کیا۔

دوسری جانب پاکستان میوزک انڈسٹری کے نوجوان گلوکار عاصم اظہر نے اپنے ٹوئٹ میں لکھا کہ ’یہاں مسئلہ صرف ایک گیم پر پابندی لگانے کا نہیں ہے بلکہ اس پابندی سے پاکستان کے ڈیجیٹل مستقبل پر بُرا اثر پڑے گا۔‘

عاصم اظہر نے لکھا کہ ’میں ماضی میں مضحکہ خیز پابندی کا شکار رہا ہوں جس پر ہمیں 5 سال تک یوٹیوب پر سامنا کرنا پڑا تھا اور اب ہم پھر سے اسی مرحلے پر ہیں، براہ کرم اسے دوبارہ ہونے نہ دیں۔‘

گلوکار نے بھی اپنے ٹوئٹ میں ہیش ٹیگ ’عمران خان پب جی کھولو‘ بھی استعمال کیا۔

واضح رہے کہ آن لائن گیم پب جی پر پابندی سے متعلق پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی نے وجوہات پرمبنی تفصیلی فیصلہ جاری کردیا ہے جس کے مطابق پب جی گیم پر دوبارہ پابندی عائد کردی گئی ۔

پب جی کے حوالے سے متعدد شکایات موصول ہونے کے بعد پی ٹی اے نے یکم جون کو یہ پابندی عائد کرتے ہوئے کہاتھا کہ یہ کھیل نشے جیسا، وقت کا ضیاع ہے اور بچوں کی جسمانی ونفسیاتی صحت پرشدید منفی اثرڈالتا ہے۔

انٹرٹینمنٹ سے مزید