آپ آف لائن ہیں
منگل11؍صفر المظفّر 1442ھ 29؍ستمبر 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

وسیم اکرم کی اظہر علی کی کپتانی پر تنقید

مانچسٹر ٹیسٹ میں شکست کے بعد سابق کپتان وسیم اکرم نے کپتان اظہر علی پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اظہر علی کو کئی مواقع ملے لیکن وہ فائدہ نہیں اٹھا سکے، شکست سے شائقینِ کرکٹ اور پاکستان ٹیم کو تکلیف ہوئی ہو گی۔

سابق کپتان وسیم اکرم نے پہلے ٹیسٹ میں شکست پر کپتان اظہر علی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ہار جیت کھیل کا حصہ ہے لیکن ہمارے کپتان نے موقع کھو دیا۔

انہوں نے کہا کہ جہاں تک اظہر علی کی کپتانی کا تعلق ہے انہیں کئی مواقع ملے لیکن وہ فائدہ نہ اٹھا سکے، جب کرس ووکس بیٹنگ کے لیے آئے تو انہیں سیٹ ہونے دیا گیا، نہ باؤنسرز، نہ شارٹ بالز کرائے گئے جس کی وجہ سے پارٹنر شپ لگ گئی تو کچھ بھی کارآمد نہ رہا اور میچ ہاتھ سے نکل گیا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان کرکٹ ٹیم قدرتی صلاحیتیوں، غیر یقینی اور اٹیک کا نام ہے، ہم کاؤنٹی بولرز نہیں ہیں جو آئیں اور سارا دن لائن اینڈ لینتھ پر بولنگ کریں۔

وسیم اکرم نے کہا کہ 17 سالہ نسیم شاہ کی اسپیڈ 90 میل فی گھنٹہ اور 20 سالہ شاہین آفریدی کی 88 میل فی گھنٹہ ہے، صورتِ حال کچھ بھی ہو انہیں اٹھارہ بیس اوورز کرنے چاہئیے تھے۔

کھیلوں کی خبریں سے مزید