آپ آف لائن ہیں
منگل11؍صفر المظفّر 1442ھ 29؍ستمبر 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

پبلک لائبریری اورنگی ٹاؤن افتتاح نہ ہونے کی وجہ سے تباہی کا شکار


پبلک لائبریری اورنگی ٹاؤن کو قائم ہوئے ڈھائی سال سے زائد کا عرصہ گزر جانے کے باوجود تاحال اس کا افتتاح نہیں کیا جاسکا،  جبکہ لائبریری تباہی کا شکار ہوگئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ ثقافت سندھ کی جانب سے اورنگی ٹاؤن سیکٹر ساڑھے گیارہ میں سال 2018 میں پبلک لائبریری اورنگی ٹاؤن قائم کی گئی تھی۔

اس لائبریری میں کرسیاں ٹیبلیں پنکھے سب کچھ لگاۓ جانے کے باوجود اس لائبریری کا افتتاح نہ ہوسکا۔ جس کے باعث لائبریری افتتاح کے بغیر ہی تباہی کا شکار ہوگئی ہے۔ 

لائبریری کے مین گیٹ کا ایک حصہ چوری ہوگیا ہے۔ محکمہ ثقافت سندھ کی جانب سے لائبریری کا انتظام چلانے کے لئے 2017-2018 , 2018-2019 اور 2019-2020 کے بجٹ میں کوئی رقم مختص نہیں کی گئی۔

تاہم رواں مالی سال میں محکمہ ثقافت سندھ کی جانب سے اس لائبریری کا انتظام چلانے کے لیے ایک لائبریری اسسٹنٹ، ایک کمپیوٹر آپریٹر سمیت 6 ملازمین کے لئے17 لاکھ روپے سے زائد کی رقم مختص کی گئی ہے۔ تاہم اس کے باوجود لائبریری بند پڑی ہے۔

محکمہ ثقافت کی جانب سے سال 2018 میں لائبریرین جاوید اقبال کی پبلک لائبریری اورنگی ٹاؤن تعیناتی کا نوٹیفیکیشن جاری کیا گیا تھا۔

لیکن انہوں لائبریری کا انتظام سنبھالنے کی بجائے لائبریری میں ایک فیملی کو بیٹھادیا ہے۔ اس سلسلے میں جاوید اقبال کا کہنا ہے کہ فیملی کو لائبریری کی دیکھ بھال کے لئے بٹھایا گیا ہے۔

قومی خبریں سے مزید