آپ آف لائن ہیں
ہفتہ6؍ربیع الاوّل 1442ھ 24؍اکتوبر 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

بل کوسبی کا خواتین کے استحصال پر سزا کیخلاف عدالت سے رجوع

لاس اینجلس (مانیٹرنگ ڈیسک)معروف امریکی کامیڈین 83 سالہ بل کوسبی نے 2018 میں خود کو ریپ اور خواتین کے جنسی استحصال کی سنائی جانیوالی سزا کے خلاف2 سال بعد عدالت سے رجوع کرلیا۔بل کوسبی کو امریکا کی ریاست میری لینڈ کی مونٹگمری کاؤنٹی کی عدالت نے دسمبر 2018 میں ایک خاتون کے ریپ کے الزامات ثابت ہونے پر تین سے 10سال قید اور جرمانے کی سزا سنائی تھی۔بل کوسبی پر 2004میں کینیڈا کی ایک باسکٹ بال کھلاڑی آندریا کونسٹائڈ کو نشہ دے کر ‘ریپ‘ کرنے سمیت دیگر60خواتین کو جنسی طور پر ہراساں کرنے جیسے الزامات تھے۔ کامیڈین نے1960کی دہائی میں کیریئر کی شروعات کی، انہوں نے1980 کے بعد ‘دی کوسبی شو’ کے نام سے مقبول ٹاکنگ شو شروع کیا، جس میں کئی خواتین و اداکارائیں شامل ہوئیں۔بل کوسبی کے خلاف اسی پروگرام میں شامل ہونے والی کئی خواتین نے بھی جنسی طور پر ہراساں کرنے اور ‘ریپ’ کا الزام لگایا۔کامیڈین کے خلاف سب سے پہلے 5 سال قبل 2015 کو اس مقدمے کا آغاز ہوا، ان کے خلاف متعدد سماعتیں بھی ہوئیں۔بل کوسبی کے خلاف اپنی اہلیہ سمیت دیگر 10

خواتین نے ہتک عزت کا بھی مقدمہ کر رکھا تھا۔ایک موقع پر عدالت نے ان پر فرد جرم بھی عائد کی تھی تاہم بعد ازاں 2017 میں حیران کن طور پر انہیں اسی کیس سے جڑے متعدد معاملات میں بری کرکے مقدمے کو بند کردیا گیا تھا۔تاہم 2017 میں شروع ہونے والی می ٹو مہم کے بعد دوبارہ بل کوسبی کے خلاف خواتین سامنے آئیں اور ان کے خلاف دوبارہ ٹرائل کا آغاز ہوا اور عدالت نے انہیں دسمبر میں مجرم قرار دے کر جیل بھیج دیا تھا۔اور اب ایک بار پھر بل کوسبی نے اپنے خلاف عدالتی فیصلے کو بدنیتی پر مبنی قرار دیتے ہوئے عدالت سے دوبارہ ٹرائل کے لیے رجوع کرلیا۔

دل لگی سے مزید