آپ آف لائن ہیں
اتوار5؍رمضان المبارک 1442ھ 18؍اپریل2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

ہم تب مطمئن ہوں گے جب قاتلوں کے خلاف کارروائی ہوگی، والد اسامہ

اسلام آباد میں پولیس کی فائرنگ سے مرنے والے اسامہ کے والد ندیم ستی کا کہنا ہے کہ بیٹے کے قتل کی ایف آئی آر کٹ گئی ہے، جوڈیشل انکوائری کا مطالبہ مان لیا گیا ہے، وزراء نے یقین دہانی کروائی ہے، ہم تب مطمئن ہوں گے جب کارروائی ہوگی۔

جیو نیوز کے پروگرام’نیا پاکستان‘ میں گفتگو کرتے ہوئے ندیم ستی نے کہا کہ طفل اور تسلیوں سے ہم مطمئن نہیں ہوں گے۔

 والد اسامہ ستی نے کہا کہ 2018 میں بیٹے پر کیس تھا تو پہلے کیوں نہیں دیکھا گیا، پولیس پر بات آئی ہے تو یہ کیس چھیڑا گیا ہے۔


انہوں نے کہا کہ آئی جی، ڈی آئی جی آئے تھے انہوں نے کہا ہماری طرف سے کوئی کیس نہیں، 2018 کے مقدمہ کی جو بات ہے وہ اسامہ ندیم کا ہے۔

 والد اسامہ ستی نے کہا کہ میرے بیٹے کو سنگدلی سے مارا ہے، ہمارا گھر اجاڑا ہے، ملزمان کو بچانے کے لیے یہ ہتھکنڈے استعمال کیے جارہے ہیں۔

قومی خبریں سے مزید