آپ آف لائن ہیں
اتوار27؍شعبان المعظم 1442ھ 11؍اپریل2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

زرداری ہاؤس اسلام آباد کے عشائیے کی اندرونی کہانی


پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری اور شریک چیئرمین آصف علی زرداری کی طرف سے پارٹی سینیٹرز اور رہنماؤں کے اعزاز میں دیے گئے عشائیے کی اندرونی کہانی سامنے آگئی۔

ذرائع کے مطابق زرداری ہاؤس اسلام آباد میں ہونے والے عشائیے میں بلاول بھٹو زرداری نے گزشتہ روز ہونے والے چیئرمین سینیٹ کے انتخابات کے حوالے سے اظہار خیال کیا۔

پی پی چیئرمین نے کہا کہ غلط تاثر دیا جارہا ہے کہ کچھ اپوزیشن سینیٹرز نے غلط مہر دانستہ طور پر لگائی ہے، چیئرمین سینیٹ کے الیکشن میں کسی بھی ووٹر نے غلط مہر نہیں لگائی۔


ذرائع کے مطابق بلاول بھٹو نے اس موقع پر اپوزیشن کے تمام ہی سینیٹرز پر مکمل اعتماد کا اظہار کیا۔

انہوں نے کہا کہ سیکریٹری سینیٹ نے ووٹ ڈالنے کے طریقے کار بتانے کے دوران امیدوار کے خانے میں کہیں بھی مہر لگانے کی ہدایت کی تھی۔

ذرائع کے مطابق پی پی چیئرمین نےمزید کہا کہ اپوزیشن کے تمام ہی سینیٹرز نے اپوزیشن اتحاد کے مشترکہ امیدوار یوسف رضا گیلانی کو ہی ووٹ دیا ہے۔

اُن کا کہنا تھا کہ اپوزیشن کی تمام جماعتیں پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم پر متحد ہیں، پریزائیڈنگ افسر کا فیصلہ جلد ہائی کورٹ میں چیلنج کریں گے، ہمیں انصاف کی امید ہے۔

ذرائع کے مطابق بلاول بھٹو زرداری نے تقریب کے دوران چیئرمین سینیٹ کے الیکشن کے لیے کیمروں کی تنصیب کے معاملے کو واٹر گیٹ کی طرح بڑا اسکینڈل قرار دیا۔

اس موقع پر پی پی رہنماؤں نے پارٹی چیئرمین کو تجویز دی کہ کامیابیاں جاری رکھنے کے لیے ضروری ہے پارلیمان سے استعفے نہ دیے جائیں۔

ذرائع کے مطابق اس پر ردعمل دیتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ استعفے دینے یا نہ دینے کا فیصلہ پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم سے کریں گے۔

قومی خبریں سے مزید